وزیر اعظم ،آرمی چیف ملاقات میں الطاف حسین کی تقریر کا سخت نوٹس

وزیر اعظم ،آرمی چیف ملاقات میں الطاف حسین کی تقریر کا سخت نوٹس

اسلام آباد، را ولپنڈی(آن لائن)آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے وزیراعظم نواز شریف سے ملاقات کی ہے جس میں ملک کی اندرونی و سرحدی سلامتی کی صور تحال ،آپریشن ضرب عضب ،آئی ڈی پیز کی واپسی،قومی ایکشن پلان کے تحت ملک بھر میں کارروائیوں،ملاعمر کی وفات،امن مذاکرات اورالطاف حسین کے حالیہ بیانات سمیت اہم امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔اس موقع پر وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان ،وزیر خزانہ اسحاق ڈار اور ڈائریکٹرجنرل آئی ایس آئی رضوان اختربھی موجود تھے۔آرمی چیف نے آپریشن ضرب عضب اور قومی ایکشن پلان کے تحت ملک بھر میں جرائم پیشہ عناصر کے خلاف جاری کارروائیوں میں ہونے والی کامیابیوں پر بریفنگ دی جبکہ ملک کے اندرونی اور سرحدی سلامتی کے حوالے سے بھی وزیر اعظم کو آگاہ کیا،دونوں رہنماؤں نے آپریشن ضرب عضب اور قومی ایکشن پلان کے تحت کارروائیوں پر اطمینان کا اظہار کیا ہے۔آ رمی چیف نے دورہ اٹلی میں حکام سے ہونے والی ملاقاتوں کے بارے میں وزیر اعظم کو اعتماد میں لیا۔ڈائریکٹرجنرل آئی ایس آئی نے آئی ڈی پیز کی واپسی اور علاقے میں تعمیر و ترقی کے حوالے سے بریفنگ دی ۔ا س موقع پر نواز شریف نے اسحاق ڈار کو ہدایت کی کہ آئی ڈی پیز کی بحالی اور تعمیر و ترقی کیلئے تمام فنڈزبروقت فراہم کئے جائیں۔وزیراعظم اورآرمی چیف کے درمیان ملا عمر کی وفات کے بعد پیدا ہونیوالی صورتحال اور افغان حکومت اور طالبان کے درمیان جاری مذاکرات پر بھی تبادلہ خیالات کیا گیا اور امن مذاکرات میں پاکستان کے ثالثی کردار پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے معطل مذاکرات جلد از جلد بحال کرنے کی کوششوں پر اتفاق کیا گیا،ملاقات میں کنٹرول لائن پر بھارتی جارحیت کامعاملہ بھی زیر غور آیا اور دونوں رہنماؤں نے پاک بھارت قومی سلامتی مشیروں کے درمیان ہونے والی متوقع ملاقات پر بھی بات چیت کی۔ وزیراعظم اورآرمی چیف ملاقات میں ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین کے حالیہ بیان کا بھی نوٹس لیاگیا۔اس موقع پر وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان نے الطاف حسین کے حالیہ بیانات اور معاملے کو برطانوی حکومت کے سامنے اٹھانے،عمران فاروق قتل کیس اورمنی لانڈرنگ کے بارے میں بریفنگ دی۔ پا ک فو ج کے شعبہ تعلقا ت عامہ کے مطابق اس سے قبل آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے انسداد منشیات کے ہیڈکوارٹرز کا دورہ کیا۔ اس موقع پر ڈائریکٹرجنرل اے این ایف نے منشیات کی اسمگلنگ کے خلاف جاری آپریشن سے متعلق بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ منشیات سے حاصل ہونے والی رقم دہشت گردی کی کارروائیوں میں استعمال ہورہی ہے جس سے نمٹنے کے لئے مزید سخت اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔ اس موقع پر جنرل راحیل شریف کا کہنا تھا کہ منشیات فروش اور دہشتگرد دونوں ہی نئی نسل تباہ کرنے کی سازش میں مصروف ہیں۔ منشیات بنانے والے اور بیچنے والے دونوں دہشت گردہیں ڈرگ مافیا کو نئی نسل تباہ کرنے کی اجازت نہیں دیں گے۔ اس حوالے سے منشیات فروشوں اور دہشت گردوں کے ساتھ آئینی ہاتھوں سے نمٹیں گے اور ملک بھر سے ان عناصر کا مکمل خاتمہ کیا جائے گا ۔ بریفنگ کے اختتام پرآرمی چیف نے 15۔2014 میں ریکارڈ منشیات پکڑنے پر اینٹی نارکوٹکس فورس کی کارکردگی کو سراہا اور شہدا کی قربانیوں کو خراج تحسین پیش کیا۔

مزید : صفحہ اول