دو سے تین روز کے دوران مون سون بارشوں کا سلسلہ جاری رہے گا،محکمہ موسمیات

دو سے تین روز کے دوران مون سون بارشوں کا سلسلہ جاری رہے گا،محکمہ موسمیات

لاہور (وقائع نگار ) محکمہ موسمیات نے اگلے دو سے تین روز کے دوران مون سون بارشوں کا سلسلہ اسلام آباد، کشمیر، بالائی پنجاب، فاٹا اور بالائی خیبرپختونخواہ میں کم شدت کے ساتھ جاری رہنے کی پیشگوئی کردی ۔آئندہ 24گھنٹوں کے دوران بالائی خیبر پختونخواہ (مالاکنڈ، ہزارہ، مردان، پشاور، کوہاٹ، بنوں ڈویژن) اسلام آباد، بالائی پنجاب (راولپنڈی، گوجرانوالہ، سرگودھا، لاہور، فیصل آباد، ساہیوال ڈویژن)، فاٹا(خیبر، کرم، باجوڑ، اورکزئی، مہمند، شمالی اور جنوبی وزیرستان ایجنسیز) گلگت اور کشمیر میں کہیں کہیں جبکہ ڈی جی خان، ڈی آئی خان، ژوب، کوئٹہ ڈویژن اور بلتستان میں چند مقامات پر گرج چمک کیساتھ مزید بارش کا امکان ہے۔اس دوران پشاور، مالاکنڈ، ہزارہ، مردان، کوہاٹ، راولپنڈی ڈویژن اور فاٹا میں بعض مقامات پر موسلادھار بارش کا امکان۔ ملک کے دیگر علاقوں میں موسم خشک رہے گا۔ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ریکارڈ کی گئی بارش(ملی میٹر) سب سے زیادہ بارش میانوالی میں 139ملی میٹر جبکہ نورپورتھل55،کوہاٹ 53، جوہرآباد43، اسلام آباد(سید پور39، گولڑہ19، بوکرہ 11، زیروپوائنٹ02)، بالاکوٹ 33، سرگودھا 29، چکوال 27، مظفر آباد 19، منڈی بہاؤالدین17، کوٹلی 15، گڑھی دوپٹہ، ساہیوال، فیصل آباد14، پاراچنار، شورکوٹ13، سیالکوٹ (کینٹ 12، ائیر پورٹ04)، ٹوبہ ٹیک سنگھ، جھنگ، گوجرانوالہ 10، مری 07، بنوں05، چراٹ، دیر 04، ڈی آئی خان، ایبٹ آباد 03، ہنزہ، بہاولنگر، بھکر، قصور، منگلا 02، سیدو شریف، لاہور، راولپنڈی 01 ملی میٹر ریکارڈ کی گئی۔

موسم

تین کا لمhr11

جوڈیشل کمیشن کی رپورٹ پرعمل ایک چیلنج ہے ،انتخابی عملے اورالیکشن کمیشن میں رابطوں کافقدان ختم کیاجائیگا

2018ء کے انتخابات جوڈیشل کمیشن کی رپورٹ کی روشنی میں بہتربنائے جائیں گے ، اجلاس سے خطاب

اسلام آباد(آن لائن)سیکرٹری الیکشن کمیشن نے کہاکہ انتخابی عملے کی تربیت میں کوئی کسرنہیں چھوڑی جائے گی،جوڈیشل کمیشن کی رپورٹ پرعمل ایک چیلنج ہے ،انتخابی عملے اورالیکشن کمیشن میں رابطوں کافقدان ختم کیاجائیگا،2018ء کے انتخابات جوڈیشل کمیشن کی رپورٹ کی روشنی میں بہتربنائے جائیں گے ،سندھ ،پنجاب کے بلدیاتی انتخابات کومثالی بنائیں گے ۔ان خیالات کااظہارالیکشن کمیشن کے اعلیٰ حکام کے ایک اجلاس میں تمام شعبہ جات کے ڈی جیزکوہدایات دیتے ہوئے کیا۔اس موقع پرایڈیشل سیکرٹری فدامحمداورسیکرٹری ٹریننگ شیرافگن بھی موجودتھے انہوں نے کہاکہ جوڈیشل کمیشن کی رپورٹ کے آنے کے بعدآئندہ انتخابی عمل ایک چیلنج ہے ،انتخابی عملے اورالیکشن کمیشن کے درمیان رابطوں کے فقدان کوختم کیاجائیگا۔2018ء کے انتخابات کے عمل کوشفاف بنایاجائیگا،آئندہ آنے والے سندھ ،پنجاب کے بلدیاتی الیکشن کومثالی بنایاجائیگا۔انہوں نے کہاکہ آراوز،ڈی آراوزاورووٹرزایجوکیشن کے حوالے سے رابطے بحال کئے جائیں گے ۔ان رابطوں کوبہتربنانے کیلئے استعدادکارمیں اضافے کیلئے ڈی جیزایڈمن کوہدایت دی ہے کہ وہ جوڈیشل کمیشن کی رپورٹ کے بعدکمیٹی کاازسرنوجائزہ لیں۔کے پی کے میں شفاف بلدیاتی انتخابات کرواکے ہم نے ثابت کیاہے کہ الیکشن کمیشن آئینی ادارہ ہے ،اوراپنی ذمہ داریاں پوری کررہاہے ،انتخابی عملے کاجائزہ لینے کیلئے پولیٹیکل پارٹیزمیڈیاکے ساتھ مل کرکام کریں گے ،سیکرٹری الیکشن کمیشن نے تمام ڈی جیزکوہدایت کی کہ ہے کہ وہ مستعدی سے کام کریں

سیکرٹری الیکشن کمیشن

NS 12تین کالم

پاکستان تاپی گیس پائپ لائن منصوبے کی جلد از جلد تکمیل کی بھرپور حمایت کرتا ہے،ترکمانستان کے نائب وزیراعظم سے گفتگو

اسلام آبا د (آئی این پی) وزیراعظم نوازشریف نے کہا ہے کہ پاکستان تاپی گیس پائپ لائن منصوبے اور اسکی جلد از جلد تکمیل کی بھرپور حمایت کرتا ہے ،منصوبے سے خطے میں توانائی کی ضروریات کو پورا کرنے میں مدد ملے گی اور یہ منصوبہ خطے کے تمام ممالک کے لئے مفید ثابت ہوگا۔گزشتہ روز وزیراعظم نوازشریف سے وزیراعظم ہاؤس میں ترکمانستان کے صدر کے خصوصی نمائندے اور آئل اینڈ گیس کے ڈپٹی وزیراعظم بیمورات ہوجامحمددو نے ملاقات کی جس میں ترکمانستان کے نائب وزیرعظم نے نوازشریف کو بتایا کہ تاپی گیس پائپ لائن پروجیکٹ کی تقریب رواں سال دسمبر میں ہوگی جس کیلئے انھوں نے ترکمانستان کے صدر کی طرف سے وزیراعظم کوتقریب میں شرکت کیلئے دعوت نامہ بھی پہنچایا۔وزیراعظم نے دعوت نامہ دینے پر شکریہ ادا کیا اور کہاکہ پاکستان منصوبے اور اسکی جلد از جلد تکمیل کی بھرپور حمایت کرتا ہے۔وزیراعظم نے کہاکہ تاپی منصوبے سے خطے میں توانائی کی ضروریات کو پورا کرنے میں مدد ملے گی اور یہ منصوبہ خطے کے تمام ممالک کے لئے مفید ثابت ہوگا۔وزیراعظم نے علاقائی رابطوں کیلئے اقدامات پر گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ گوادر اور وسطی ایشیا کے درمیان ریل اور سڑکوں کے رابطے سے خطے میں معاشی سرگرمیوں میں اضافہ ہوگا۔انھوں نے کہاکہ پاکستان گوادر تک ریل اور سڑکوں کے ذریعے رابطے کیلئے ترکمانستان اور وسطی ایشیا کے ممالک کی مدد کرے گا۔اس موقع پروفاقی وزیر پٹرولیم شاہد خاقان عباسی ،وزیراعظم کے قومی سلامتی کے مشیر سرتاج عزیز اور وزیر مملکت برائے پٹرولیم جام کمال بھی موجود تھے ۔

مزید : صفحہ اول