دوہرے قتل کے مجرم کی سزائے موت معطل ، مچلکوں پر ضمانت منظور

دوہرے قتل کے مجرم کی سزائے موت معطل ، مچلکوں پر ضمانت منظور

لاہور (نامہ نگار خصوصی ) لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس مظہر اقبال سدھو کی سربراہی میں قائم ڈویژن بنچ نے دوہرے قتل کے مجرم کی سزائے موت معطل کرتے ہوئے اسے 2،2 لاکھ روپے کے دو مچلکوں کے عوض ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دے دیا۔ مجرم مظہر کی درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ اس کے خلاف 2011ء میں 2بھائیوں محمد اکمل اور محمد اجمل کے قتل کے الزام میں بے بنیاد اور جھوٹا مقدمہ درج ہوا، تاہم ایڈیشنل سیشن جج ٹوبہ ٹیک سنگھ نے حقائق کو نظر انداز کرتے ہوئے اسے اپریل 2014ء میں موت کی سزا سنائی۔ درخواست گزار کاکہنا تھا کہ اس کے خلاف مقدمہ اس بنیاد پر درج کیا گیا کہ اس نے مقتولین سے اپنے باپ کے قتل کا بدلہ لیا حالانکہ اس نے کسی کے قتل کا جرم نہیں کیا، علاوہ ازیں عدالت اس کے شریک مجرم کو ضمانت پررہا کرچکی ہے ،اس کی سزا پر عمل درآمد معطل کرتے ہوئے اپیل کے فیصلے تک اسے ضمانت پر رہا کیا جائے۔

ضمانت

مزید : صفحہ آخر