بحرین میں غیرملکی شہری سے توہین آمیز سلوک مقامی باشندے کو مہنگاپڑگیا، ساتھیوں کو بھی لے ڈوبا

بحرین میں غیرملکی شہری سے توہین آمیز سلوک مقامی باشندے کو مہنگاپڑگیا، ...
بحرین میں غیرملکی شہری سے توہین آمیز سلوک مقامی باشندے کو مہنگاپڑگیا، ساتھیوں کو بھی لے ڈوبا

  

منامہ (مانیٹرنگ ڈیسک) ایشیائی باشندے کو تھپڑمارنے والے بحرینی شہری کو تین ساتھیوں سمیت گرفتار کرلیاگیاہے ، اس واقعے کی ویڈیو سامنے آنے کے بعد انٹرنیٹ صارفین کی طرف سے مذمت اور ایکشن لینے کا مطالبہ کیاگیاتھا۔

ویڈیو کلپ میں دیکھاجاسکتاہے کہ ہاتھ میں بالٹی تھامے ایک صحت مند شخص نے غیرملکی باشندے کو زوردار تھپڑمارا جس پر دیگر دوسرے لوگوں نے ہنسناشروع کردیا جو ویڈیو میں دکھائی نہیں دے رہے تاہم جملے بھی کس رہے تھے ۔عرب میڈیا کے مطابق ابتدائی طورپر اس توہین آمیز تشدد کی وضاحت سامنے نہیں آئی تاہم ملزم کے ہاتھ میں موجود پانی کی بالٹی سے شبہ ہوتاہے کہ غیرملکی شخص کار دھور ہاتھا اور تھپڑپڑنے سے اپنی جگہ سے ہل گیا۔

وزیرخارجہ شیخ خالد بن الاحمد الخلیفہ سوشل میڈیا کے ان پہلے صارفین میں سے تھے جنہوں نے اس ویڈیو پر غم و غصہ اور مذمت کا اظہار کیا۔ اُنہوں نے مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹوئٹر پر لکھاکہ ’وہ اپنے وطن کو چھوڑکرآیا اور خاندان سے الگ کچھ رقم کے لیے سخت محنت کرتاہے لیکن پھر ایک نیچ شخص اسے تھپڑمارتاہے ، اللہ اسے حملہ کرنیوالے شخص سے حقوق دلائے‘۔

بعدازاں پولیس نے کہاکہ اس ضمن میں چار ملزمان کو گرفتار کرلیاگیاہے ۔پولیس کے مطابق جنوبی گورنری کی پولیس نے سوشل میڈیا پر گردش کرنیوالی ویڈیو فوٹیج پر نوٹس لیاہے اور گرفتار ملزمان کو قانونی کارروائی کیلئے متعلقہ حکام کے حوالے کیاجائے گا۔

یہاں یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ بحرین کی تقریباً آدھی آبادی غیر ملکیوں پر مشتمل ہے اور ایشیائی ممالک سے تعلق رکھنے والوں کی اکثریت کوئی مہارت نہیں رکھتی اور عمومی طورپر تعمیرات اور سروسز سیکٹر میں کام کرتی ہے ، بیشترغیرملکیوں کو گردونواح میں گاڑیاں دھونے اور صاف کرنے نوکریاں ملتی ہیں اور ایک علاقے سے دوسرے علاقے میں آنے جانے کیلئے سائیکل دی جاتی ہے ۔

مزید : جرم و انصاف