شوریٰ ہمدرد کا اجلاس

شوریٰ ہمدرد کا اجلاس

لاہور (پ ر) قوانین پامالی اور انسانی جانوں کی ارزانی ایسے مہلک امراض ہیں جو کسی بھی قوم یا ملک کو لاحق ہو جائیں تو اس کی بقاء سوالیہ نشان بن جاتی ہے، ہمیں ان امراض کے علاج کی فکر بھی کہیں محسوس نہیں ہوتی۔ شترمرغ کی طرح ریت میں منہ چھپا کر پوری قوم بس کسی معجزے کی منتظر نظر آتی ہے۔ تاریخ گواہ ہے کہ مذکورہ بیماریوں کا علاج معجزوں سے نہیں، صحیح تشخیص سے ممکن ہے۔ ان خیالات کا اظہار مقررین نے گزشتہ روز شوریٰ ہمدرد کے اجلاس سے ’’پاکستان کو لاحق متعدد امراض کا علاج سماجی اور اصلاحی تحاریک کی ضرورت‘‘ کے موضوع پر ہمدرد مرکز لاہور میں کیا۔ اجلاس میں ڈاکٹر رفیق احمد، بشریٰ رحمن، ابصار عبدالعلی، ڈاکٹر آصف محمود جاہ، ڈاکٹر محمد امجد ثاقب، چودھری، پروفیسر میاں محمد اکرم، خالد محمود عطاء و دیگر نے کیا۔

مزید : میٹروپولیٹن 4