سندھ میں رینجرز کے قیام میں توسیع ،کراچی میں کارروائی کا خصوصی اختیار بحال

سندھ میں رینجرز کے قیام میں توسیع ،کراچی میں کارروائی کا خصوصی اختیار بحال

  

اسلام آباد،کراچی ( مانیٹرنگ ڈیسک)وفاق نے رینجرز اختیارات سے متعلق سندھ حکومت کے 15 قواعد و ضوابط مسترد کر دئیے اوررینجرز کو پورے سندھ سمیت کراچی آپریشن کے اختیارات کے دو نوٹیفکیشن جاری کر دئیے ہیں۔ رینجرز اپنی کارروائیوں پر پولیس کو بتائیں گے اور نہ ہی سندھ حکومت کوبلکہ ڈنکے کی چوٹ پر کام کریں گے ۔رینجرز سرکاری دفاتر پر چھاپے کی اجازت لیں گے اور نہ ہی پٹرولنگ اجازت لے کر کریں گے ۔تفصیلات کے مطابق رینجرز کوسندھ میں ایک سال کی توسیع اور کراچی میں تین ماہ کیلئے خصوصی اختیارات دے دیئے گئے۔اس کیلئے آئین کے آرٹیکل 147کا سہارا لیا گیا۔رینجرز کراچی میں انسداد دہشت گردی ایکٹ کے تحت کاروائیاں کر سکے گی ، پولیس کی معاونت بھی کریگی۔وفاق نے سندھ حکومت کی سمری میں قواعد و ضوابط کے 15 نقاط مسترد کر تے ہوئے کہاکہ رینجرز کو کارروائی کے مشروط اختیارات سے متعلق آئین کے آرٹیکل 147 کے تحت وفاق سے مشاورت ہی نہیں کی گئی،رینجرز سندھ بھر میں پرانے طریقہ کارکے مطابق کارروائیاں جاری رکھے گی،رینجرز کو کرچی میں 90 روز کیلئے خصوصی اختیارات بھی مل گئے۔ذرائع کے مطابق یکم اگست کو سندھ حکومت نے رینجرز کے اختیارات کا جو نوٹیفکیشن جاری کیا اس میں قواعد و ضوابط کے تحت اختیارات دینے کا نکتہ پہلی بار شامل کیا گیا، قواعد ضوابط کی لسٹ الگ لگائی گئی جس میں 15 نکات شامل کیے گئے، ان قواعد کے مطابق رینجرز کو پابند کیا گیا کہ وہ سرکاری دفاتر پر چھاپوں سے قبل سندھ حکومت کی اجازت لیں گے ، محدود علاقوں میں ہدایات کے مطابق پٹرولنگ کریں گے ، کارروائیوں سے متعلق علاقے کی پولیس کے افسران کو آگاہ کریں گے اور کئی معاملات میں اجازت لیں گے۔ جہاں پولیس کیلئے تعیناتی ممکن نہیں ہو گی وہاں رینجرز تعینات ہو گی۔دوسر ی طرف سندھ حکومت نے اپنا لائحہ عمل تیار کرنے کیلئے اعلیٰ سطحی اجلاس بھی طلب کر لیا ہے۔

مزید :

صفحہ اول -