عراق، اسلحے کے سودوں میں بدعنوانیوں کے الزامات کی تحقیقات کا حکم

عراق، اسلحے کے سودوں میں بدعنوانیوں کے الزامات کی تحقیقات کا حکم

بغداد (اے پی پی) عراق کے وزیراعظم حیدر العبادی نے اسلحے کے سودوں میں بدعنوانیوں کے الزامات کی تحقیقات کا حکم دیا ہے۔عراق کے وزیر دفاع خالدالعبیدی نے پارلیمان کے ایک بند کمرے کے اجلاس میں سپیکر سلیم الجبوری اور بعض دوسرے ارکان پر اسلحے اور دفاعی سازو سامان کی خریداری کے سودوں پر اثرانداز ہونے کے سنگین الزامات عاید کیے تھے۔اس کے بعد وزیراعظم حیدرالعبادی نے حکومت کے تحت سچائی کمیشن کو ان الزامات کی تحقیقات کا حکم دیا ہے۔عراقی پارلیمان کے اسپیکر سلیم الجبوری نے ان الزامات کی تردید کی ہے اور کہا ہے کہ وہ جب تک خود کو ان الزامات سے بری الذمہ قرار نہیں دلوا لیتے،اس وقت تک وہ پارلیمان میں اجلاس کی صدارت نہیں کریں گے۔وزیر دفاع خالد العبیدی نے سوالوں کے جواب میں ایوان کو بتایا تھا کہ سلیم الجبوری اور دوسرے ارکان نے مختلف مواقع پر طیاروں ،فوجی گاڑیوں ،سویلین کاروں یا فوج کے لیے خوراک مہیا کرنے والی کمپنیوں یا کاروباری افراد کی جانب سے فیصلوں پر اثرانداز ہونے کی کوشش کی تھی۔انھوں نے فوجیوں ،افسروں اور دوسرے اہلکاروں کے وزارت دفاع میں تقررو تعیناتیوں کی بھی سفارش کی تھی۔

مزید : عالمی منظر