گھر سے بھاگ کر شادی کی سزا، چنیوٹ کا 7سالہ لڑکی کی شادی 40سالہ شخص سے کرانے کا فیصلہ

گھر سے بھاگ کر شادی کی سزا، چنیوٹ کا 7سالہ لڑکی کی شادی 40سالہ شخص سے کرانے کا ...

  

چنیوٹ(نمائندہ خصوصی)پنچائیت نے گھر سے بھاگ کر شادی کرنیوالے جوڑے کے بارے انوکھا فیصلہ سنادیا لڑکے کی سات سالہ بھتیجی کی شادی لڑکی کے چالیس سالہ پانچ بچوں کے ماموں سے کرانے کا حکم دے دیا نواحی علاقہ نوشہرہ کے رہائشی ندیم نے اپنی برادری کی ہاجراں بی بی کے ساتھ گھرسے بھاگ کراٹھارہ جولائی کو شادی کرلی جس پر ہاجراں کے والد گلزار نے برادری کی پنچائیت بلائی پنچائیت کے سربراہ فلک شیر وغیرہ نے فیصلہ سنایا کہ ندیم نے ان کی عزت کو تار تار کیا ہے لہذا ندیم کی سات سالہ بھتیجی سونیا دختر عمردارز کی شادی ہاجراں کے ماموں پانچ بچوں کے باپ چالیس سالہ منظور کے ساتھ کردی جائے منظور کی پہلی بیوی انتقال کرچکی ہے اس سلسلہ میں برادری نے سونیا کے باپ عمردارز کو ایک ہفتے کا ٹائم دیتے ہوئے کہا بیٹی کی رخصتی کرو اس کا ٹریکٹر ٹرالی ضمانت کے طور پر اپنے قبضہ میں لے لیا سات سالہ سونیا کے باپ کو یہ بھی کہا گیا کہ اگر اس نے پولیس یا کسی کو اطلاع دی تو برادری کی طرف سے اس کا معاشی بائیکاٹ کردیا جائے گا عمردارز نے سات سالہ بیٹی کی جان بچاتے ہوئے اسے گاؤں سے غائب کردیا ہے ڈی پی اومستنصر فیروز نے اطلاع ملتے ہی ڈی ایس پی اور ایس ایچ او بھوانہ کو موقع پر بھجوا کر دونوں پارٹیوں کو طلب کر لیا ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -