ڈاکٹر عاصم رینجرز کی وردی دیکھ کر ڈر جاتے ہیں،نیند بھی نہیں آتی: میڈیکل رپورٹ میں انکشاف

ڈاکٹر عاصم رینجرز کی وردی دیکھ کر ڈر جاتے ہیں،نیند بھی نہیں آتی: میڈیکل رپورٹ ...
ڈاکٹر عاصم رینجرز کی وردی دیکھ کر ڈر جاتے ہیں،نیند بھی نہیں آتی: میڈیکل رپورٹ میں انکشاف

  

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک)کراچی کی احتساب عدالت میں ڈاکٹر عاصم اور دیگر کے خلاف کرپشن کیس کی سماعت ہوئی۔ سماعت کے دوران ڈاکٹر عاصم کی میڈیکل رپورٹ پیش کی۔ ڈاکٹر عاصم کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ سابق مشیر پیٹرولیم تاحال خوف کا شکار ہیں اوراسی وجہ سے ذہنی تناو¿ میں بھی مبتلا ہیں، رینجرز کی وردی دیکھ کر بھی خوف کا شکار ہوجاتے ہیں اورخوف کے باعث انہیں نیند بھی نہیں آتی۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ نجی ہسپتال میں ڈاکٹرعاصم کی سائیکو تھراپی کا بھی کوئی فائدہ نہیں ہوا۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق عدالت نے میڈیکل رپورٹ پر ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں ہر دوسرا شخص رپورٹ میں بتائی گئی بیماریوں کا شکار ہے گزشتہ 6 ماہ سے ملزم کا طبی معائنہ ہورہا ہے لیکن ڈاکٹر عاصم ٹھیک نہیں ہو رہے ملزم کو کبھی کسی ہسپتال لے جایا جاتا ہے اور کبھی کہیں۔عدالت نے میڈیکل بورڈ کے سربراہ کو ہدایت جاری کرتے ہوئے کہا کہ ڈاکٹر عاصم کی سرجری کہاں کہاں ہوسکتی ہے تمام معلومات لے کر بتایا جائے میڈیکل بورڈ کی ذمہ داری ہے کہ وہ تمام سہولتیں فراہم کرے۔ عدالت نے میڈیکل بورڈ کے سربراہ ڈاکٹر رضا رضوی کو آئندہ سماعت پر طلب کرتے ہوئے سماعت 16 اگست تک ملتوی کردی۔دوسری جانب میڈیا سے غیر رسمی بات کرتے ہوئے ڈاکٹر عاصم کا کہنا تھا کہ کسی بھی چیز کو حاصل کرنے کے لئے قربانی دینی پڑتی ہے اگر اچھے دن نہیں رہے تو یہ بھی نہیں رہیں گے لیکن کچھ بھی ہوجائے میں ڈرنے والوں میں سے نہیں اور نہ ہی اصولوں پر سمجھوتا کروں گا۔

مزید :

کراچی -