مودی کی جارحانہ سوچ نے انسانیت کوخون میں ڈبو دیا،رمضان رضی خان

   مودی کی جارحانہ سوچ نے انسانیت کوخون میں ڈبو دیا،رمضان رضی خان

  

 لاہور( پ ر)تحریک دفاع پاکستان کے مرکزی چیئرمین جمیل رمضان خان رضی نے کہا ہے کہ حکمران کشمیریوں کی آزادی کیلئے منافقت یامفاہمت نہیں بھارت کیخلاف مزاحمت کاراستہ اختیار کریں۔کشمیریوں کے استحصال کیخلاف ایک منٹ کیلئے خاموشی اختیارکرنے کی تجویز ایک بھونڈا مذاق ہے۔جنت نظیر کشمیر میں آگ بھڑکانے والے بھی اس کی زد میں آئیں گے۔

آزادی کشمیریوں کامقدر اوران کی منتظر ہے۔پرعزم کشمیریوں نے بھارتی جارحیت کیخلاف اپنی استقامت اور مزاحمت کے بل پر غلامی کی بیڑیاں توڑدیں۔نریندرمودی کی جارحانہ سوچ بھارت کوڈبودے گی۔بھارت کے انتہاپسندحکمرانوں کا جنون کئی ملین بھارتی مسلمانوں کوخون میں ڈبوگیا۔مودی اوراس کے حواری یادرکھیں وہ ایٹمی پاکستان کومرعوب نہیں کرسکتے۔پاکستان امن کاعلمبرداراوربھارت کے ساتھ برابری کی بنیادپرمثبت تعلقات کاخواہاں ہے مگرہماری اس خواہش کوہماری کمزوری نہ سمجھا جائے۔وہ ایک اجلا س سے خطاب کررہے تھے۔جمیل رمضان خان رضی نے کہا کہ بھارت کی بلاجوازاورمسلسل جارحیت کے باوجود اقوام متحدہ کی مجرمانہ خاموشی نے ایک بار پھر ا سے متنازعہ بنادیا ہے۔نریندرمودی کے دوسری بار اقتدار میں آنے سے بھارت میں شدت پسندی کومزیدتقویت ملی اور مسلمانوں سمیت ہر اقلیت کے لوگ اپنے بنیادی حقوق سے محروم ہوگئے۔دنیا کاباضمیرانسان بھارت میں مسلمانوں کے حقوق کی پامالی پر مضطرب اورمشتعل ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کی سرفروش فوجی جوان اورہمارے نڈررینجرز ورکنگ باؤنڈری اوراپنے شہریوں کی حفاظت کرناجانتے ہیں۔بھارت کشمیریوں سمیت ہمارے بیگناہ شہریوں کے خون سے ہولی کھیلنا بندکرے ورنہ اسے گولی کاجواب گولی سے دیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ بھارت ورکنگ باؤنڈری پرسیزفائرکی پابندی یقینی بنائے۔بھارت کواپنی ہٹ دھرمی کی بھاری قیمت چکاناپڑے گی،وہ پاکستان کوکچھ نہیں بگاڑسکتا۔ 

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -