غیور کشمیری بھارت سے اخلاقی جنگ جیت چکے، عالمی ضمیر مفادات، مصلحتوں کے باعث خاموش: شاہ محمود قریشی 

    غیور کشمیری بھارت سے اخلاقی جنگ جیت چکے، عالمی ضمیر مفادات، مصلحتوں کے ...

  

   مظفر آباد (بیورورپورٹ، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے مظفر آباد میں وزیراعظم آزاد کشمیر سے ملاقات کی جبکہ کشمیری بہن بھائیوں سے اظہار یکجہتی کیلئے وزیر دفاع پرویز خٹک اور معید یو سف کیساتھ لائن آف کنٹرول کے سیکٹر چری کوٹ کا دورہ بھی کیا۔ وزیر خارجہ نے مظفرآباد میں وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر سے ملاقا ت میں کل بروزبدھ 5 اگست کو یوم استحصال کے لائحہ عمل کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا۔ وزیرخارجہ نے اس موقع پر کہا پوری پاکستانی قوم، مشکل کی اس گھڑی میں اپنے کشمیری بہن  بھا ئیوں کیساتھ ہے، کشمیریوں کی آواز ہر فورم پر اٹھائیں گے۔سیکٹر چری کوٹ کے دورے کے موقع پر وزیردفاع پرویز خٹک اور معید یوسف بھی وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کیساتھ موجود تھے۔ اس موقع پر عسکری حکام کی طرف سے وزیر خارجہ کو مفصل بریفنگ دی گئی۔وزیر خارجہ نے لائن آف کنٹرول پر تعینات پاک فوج کے جوانوں کی عظمت، ہمت اور جذ بے کو خراج تحسین پیش کیااور کہا بھارت جو مرضی فیصلے کر لے کشمیریوں نے بھارت کے 5 اگست کے اقدامات کو مسترد کر دیا، پوری قوم کشمیریوں کی جوانمردی اور بہادری پر فخر کرتی ہے۔وزیرخارجہ کے دورہ کے موقع پر ذرائع ابلاغ کے نمائندے اور عسکری حکام بھی ایل او سی کے سیکٹر چری کوٹ پہنچے۔وزیر خارجہ نے غیر ملکی میڈیا نمائندگان کو بھارت کی جانب سے لائن آف کنٹرول کی مسلسل خلاف ورزیوں اور ان کے نتیجے میں شہری آبادی کو پہنچنے والے نقصانات سے آگاہ کیا۔ان کا کہنا تھا اس دورہ کا مقصد میڈیا کے ذریعے دنیا بھر کے سامنے بھارت کے اصل چہرے کو بے نقاب کرنا ہے۔ بعد ازاں وزیر خارجہ نے لائن آف کنٹرول پر قائم آبادیوں کے باسیوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا بھارتی فورسز نہتے اور مظلوم لوگوں کو اپنی گولیوں کا نشانہ بناتے ہیں، ہمارے درمیان بیٹھے زخمی شہری ان مظالم کا منہ بولتا ثبوت ہیں،ہم آپ کے عزم و ہمت اور حوصلے کی داد دیتے ہیں۔ انشاء اللہ فتح آپکی ہوگی کیونکہ آپ حق پر ہیں، یہ اور بات ہے کہ دنیا اپنی تجارتی و دیگر مصلحتوں کے تحت کھل کر اس پر آواز بلند نہیں کرتی۔بھارت سرکارکی جانب سے مساجد پر تالے لگانے سے دلوں اور ذہنوں کو قید نہیں کیا جا سکتا، آواز دبائی گئی لیکن سوچ آزاد ہے۔ پاکستان کا بچہ بچہ، عسکری و سیاسی قیادت اور تمام سیاسی جماعتیں مسئلہ کشمیر پر اتفاق رائے رکھتے ہیں۔ ہم آپ کی آواز کو دنیا کے ہر فورم پر اٹھائیں گے اور جذبات کی ترجمانی کرتے ہوئے عالمی ضمیر کو جھنجوڑیں گے۔ تمام کشمیری، پوری پاکستانی قوم اور مسلح افواج، ہم سب ایک اور یک جان دو قالب ہیں۔ کشمیر ہائی وے اب سرینگر ہائی وے کہلائے گی کیونکہ ہماری منزل سرینگر ہے۔ وہ دن دور نہیں جب حریت کے جذبے سے لبریز کشمیری سرینگر کی جامع مسجد میں شکرانے کے نوافل ادا کریں گے۔بعدازاں وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے مظفر آباد میں آل پارٹیز کانفرنس میں بھی شرکت کی جس میں پانچ اگست کے اقدامات کے حوالے خصوصی تبادلہ خیال کیا گیا۔ اجلاس میں تحریک انصاف، مسلم کانفرنس، جماعت اسلامی، پیپلز پارٹی، مسلم لیگ (ن) اور دیگر جماعتوں کے نمائندے شریک تھے۔

شاہ محمود قریشی

مزید :

صفحہ اول -