ڈیرہ: زمیندار کا گھریلو ملازمہ بچی پر تشدد‘ وزیراعلیٰ کا نوٹس 

ڈیرہ: زمیندار کا گھریلو ملازمہ بچی پر تشدد‘ وزیراعلیٰ کا نوٹس 

  

ڈیرہ غازیخان (سٹی رپورٹر) سمینہ سادات کے علاقہ میں زمیندار نے گھریلو ملازمہ بچی پر مبینہ تشدد کر ڈالا،وزیراعلی پنجاب نے واقعہ پر نوٹس لیکر کمشنر کو بچی کے علاج معالجے کاحکم دیدیا،تفصیلات کے مطابق ڈیرہ غازیخان کے نواحی علاقہ موضع قصبہ سادات کے رہائشی میاں کلیم حفیظ قریشی کے گھر سات سالہ بچی فرزانہ بی بی کام کرتی تھی اس سے تیس روپے گرکرگم ہوگئے ا(بقیہ نمبر52صفحہ6پر)

س پر ظالم شخص نے چوری کا الزام لگاتے ہوئے مبینہ طور پر ڈنڈوں سے بہیمانہ تشدد کیا معصوم بچی التجا کرتی رہی کہ اس نے چوری نہیں کی تشدد کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی جس پر ڈی پی او اختر فاروق نے فوری مقدمہ درج کرکے کارروائی کا حکم دیا جس پر تھانہ دراہمہ پولیس موقع پر پہنچ گئی ورثا نے کاروائی سے مبینہ طور پر انکاری کیا تو پولیس دراہمہ نے اپنی مدعیت میں مقدمہ درج کرلیا ادھر وقوعہ کی اطلاع ملتے ہی وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے 7 سالہ گھریلو ملازمہ پر تشدد کے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے آر پی او ڈیرہ غازی خان عمران احمر سے فوری رپورٹ طلب کر لی اور بچی کے فوری علاج معالجے کے لئے کمشنر ساجد ظفر ڈال کو ہدایت کی جس پر کمشنر کی ہدایت پر ٹیچنگ ہسپتال میں متاثرہ بچی کا علاج شروع کردیاگیا ہے جبکہ تشدد کے ملزم کلیم ولد حفیظ کو فوری طور پر ڈی پی او اختر کی طرف سے سخت ایکشن لیتے ہوئے ایس ایچ او دراہمہ اے ڈی گجر نے ملزم کلیم اللہ ولد حفیظ قریشی سکنہ سمینہ شرقی کو گرفتار کر کے تحقیقات شروع کردی ہیں۔

نوٹس

مزید :

ملتان صفحہ آخر -