ملتان: غیر قانونی کھالیں جمع کرنے  پر 8 افراد گرفتار‘ کارروائی شروع

ملتان: غیر قانونی کھالیں جمع کرنے  پر 8 افراد گرفتار‘ کارروائی شروع

  

 ملتان (وقا ئع نگار)   پولیس نے خفیہ اداروں کی نشاندہی پر عید الاضحی کے موقع پر غیر قانونی طریقے سے کھالیں جمع کرنے کے الزام میں 8افراد کو گرفتار کرکے کھالیں برآمد(بقیہ نمبر40صفحہ6پر)

 کرلی ہے۔تفصیل کے مطابق سٹی جلالپور پولیس نے خفیہ اداروں کی نشاندہی پر بستی نون سیال موضع عنایت پور مہتم مدارس العزیز العلوم غلام مصطفی کو گرفتار کیا جو غیر قانونی طریقے سے بغیر این او سی کے کھالیں اکھٹی کررہاتھا جس کے قبضے سے گھر سے سولہ بڑے جانور کی کھالیں برآمد کرلی،اسی تھانہ کی حدود محلہ مصطفی آباد سے مہتم مدرسہ صمدیا تعلیم القرآن محمد شہزاد کو حراست میں لیکر چودہ بڑی اور تیس چھوٹے جانور کی کھالیں قبضے میں لیلی گئی، بوہڑ والہ چک کے قریب مدرسہ فریدیہ خورشید کا عامر اپنی موٹرسائیکل پر غیر قانونی طریقے سے کھالین جمع کررہاتھا جو اکھٹی کرنے کے بعد مفتی اعجاز احمد قریشی کے پاس پہنچا پولیس نے موقع پر پہنچ کر قبضے سے دو بڑی اور ایک چھوٹی کھال برآمد کرلی، بستی ملوک پولیس نے نواب ہوٹل کے قریب محمد ارشد اور محمد عاشق کو قابو کیا جو بغیر این او سی عوام سے قربانی کی کھالیں اکھٹی کررہے تھے جن کے قبضے سے 170بڑی اور280چھوٹی کھالیں برآمد کرلی،راجہ رام پولیس نے ماڑی والہ کے قریب مدرسہ محمدیہ سلطانیہ غوثیہ سردارالعلوم (بریلوی)کے علی نواز کو گرفتار کیا جس کے قبضے سے دو بڑی اور چار چھوٹی کھالیں برآمد کرلی جبکہ تھانہ مظفر آباد پولیس نے مدرسہ رحمت العالمین (دیوبند) میں محمد مہربان نے بغیر این او سی کے چھوٹے اور بڑے گیارہ کھالیں اکھٹی کی ہوئی تھی،پولیس نے یہ ساری کارروائی خفیہ اداروں کی نشاندہی پر کرتے ہوئے آٹھ افراد کو بمعہ کھالیں سمیت گرفتار کیا جو بغیر این او سی کے عید الاضحی کے دنوں میں عوام سے قربانی کی کھالیں اکھٹی کررہے تھے،جن کو گرفتار کرکے کارروائی شروع کردی ہے۔

کھالیں

مزید :

ملتان صفحہ آخر -