جنوبی پنجاب: خوفناک حادثے، 27افراد جاں بحق، عید پرگھروں میں کہرام بین 

    جنوبی پنجاب: خوفناک حادثے، 27افراد جاں بحق، عید پرگھروں میں کہرام بین 

  

  ملتان،لودھراں،وہاڑی، رحیم یارخان، کہروڑ پکا، اوچشریف، اڈا کوٹ بہادر، ٹبہ کوٹ، مظفر گڑھ، کوٹ ادو، حاصل پور، ماچھیوال، راجن پور، قطب پور، رحیم یارخان(وقائع نگار، بیورو رپورٹ، نمائندگان پاکستان) ٹریفک حادثہ میں ایک شخص جان بحق ہو گیا۔تفصیل کے مطابق  ملتان ہیڈ محمد والا روڈ پر کار MLC 2524 اور موٹرسائیکل نمبر MHK 4336 کے درمیان خوفناک تصادم حادثہ ہوا۔تیز رفتار موٹر(بقیہ نمبر45صفحہ7پر)

سائیکل سامنے سے ا?نے والی مہران کار سے ٹکرا گئی جس سے موٹرسائیکل پر سوار فرحان ولد سبحان سکنہ چونگی نمبر 5 نواب پور روڈ ملتان موقع پر جانبحق ہوگیا جبکہ کار ڈرائیور موقع سے فرار ہو گیا تھانہ صدر ملتان پولیس موقع پر پہنچ گئی اور ضروری کاروائی کے بعد کار اور موٹر سائیکل کو قبضہ میں لے لیا اور جاں بحق کی ڈیڈ باڈی کو نشتر ہسپتال ملتان شفٹ کر دیا اور فرار ہونے والے ڈرائیور کی تلاش شروع کر دی۔تھانہ راجہ رام کے علاقے خودکشی کی کوشش کرنے والی 32سالہ خاتون دم توڑ گئی ہے۔تفصیل کے مطابق کھوہ نیل والا موضع مٹوٹلی کی رہائشی خاتون پروین بی بی نے گھریلوں حالات سے دلبرداشتہ ہوکر زندگی کا خاتمہ کرنے کے لئے کالا پتھر پی لیا جسے حالت غیر ہونے پر وکٹوریہ ہسپتال داخل کروایا گیا جو دوران علاج زندگی کی بازی ہار گئی،پولیس نے پروین بی بی کی نعش وکٹوریہ ہسپتال سے وصول کرکے ضروری کاغذی کارروائی مکمل کرنے کے بعد ورثا کے حوالے کرنے کے بعد معاملہ کی چھان بین شروع کردی ہے۔تیز رفتارکار  کی ٹکر سے موٹر سائیکل سوار تین نوجوان کزن جاں بحق    ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال  کے قریب لنک روڈ سے ملتان بہاولپور روڈ پر چڑھنے والے  موٹر سائیکل سوارتین کزن 13 سالہ نادر ولد سراج 14 سالہ سلمان ولد ریاض  سکنہ منشی والا  اور 14 سالہ شہاز ولد افضل سکنہ آدم واہن   ملتان سے بہاولپور جانے والی ایک تیز رفتارکار کی زد میں آگئے جس سے نادر اورسلمان موقع پرجاں بحق ہوگئے  جبکہ  شہباز کو تشویشناک حالت کے پیش نظر  بہاولپور وکٹوریا اسپتال ریفر کردیا گیا جہاں پہنچ کر وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گیا ہے پولیس کے مطابق کار ڈرائیور  موقع سے فرار ہو گیا جبکہ کار میں سوار 2 کم عمر نوجوان  13 سالہ مبشر اور 14 سالہ حمزہ بھی  زخمی ہو گئے جنہیں ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال منتقل کردیا گیا ہے پولیس ذرائع کے مطابق متوفیان کے ورثا نے اتفاقیہ حادثہ قرار دیتے ہوئے قانونی کاروائی سے انکار کردیا ہیپولیس کے مطابق حسب ضابطہ کاروائی عمل میں لائی جا رہی ہے۔انتظامیہ کی غفلت و لاپرواہی سے دریا ستلج میں ڈوب کرتین نوجوان جان کی بازی ہارگئے انتظارکرایاانتظامیہ دریاستلج میں نہانے پرپابندی پرعملدرآمدکرانے میں ناکام ہوگئی تفصیل کے مطابق شہری کی بہت بڑی تعدادکوروناحکومتی ایس او پی کی خلاف ورزی کرتے ہوئیعید کے تیسرے روزبھی پکنک منانے دریائے ستلج ہیڈاسلام کے مقام پہنچ گئی اس دوران انتظامیہ کی غفلت و لاپرواہی سے  تین نوجوان دریائے ستلج ہیڈاسلام میں  نہاتے ہوئے ڈوب کرجاں بحق ہو گئے واقعہ کی اطلاع ملنے پر ریسکیو اہلکار موقع پر پہنچ گئے اورلاشوں کونکال کراسپتال منتقل کردیاہے۔ڈوب کرجاں بحق ہونیوالوں میں 18سالہ محمدآصف، 17 سالہ عمر،18سالہ تنریل بتائے جاتے ہیں جن میں سے دوکا تعلق وہاڑی جبکہ ایک کاتعلق چشتیاں سے بتایاجاتاہے۔عید کی خوشیاں ماتم میں تبدیل،نواحی گاوں 571 ای بی کا رہائشی خاندان حاصل پور روڈ پر خوفناک حادثہ کا شکار ہوگیا،حادثہ میں  3بہن بھائیوں، والدہ سمیت 4افراد جاں بحق ہوگئے تفصیل کے مطابق نواحی گاؤں 571ای بی کا رہائشی چوہدری رشید آرائیں اپنے اہلخانہ جن میں بیوی،دو بیٹے اور دو   بیٹیاں شامل تھی کے ہمراہ پکنک منا کر واپس اپنے گھر آرہے تھے کہ ان کی گاڑی مخالف سمت سے آنیوالی کار سے ٹکرا گئی حادثہ میں دو بیٹے اور والدہ موقع پر جاں بحق جبکہ چوہدری رشید،اس کی دونوں بیٹیاں اور دوسرے کار سوار ڈاکٹر شعیب کو تشویشناک حالت میں وکٹوریہ ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں ان کی ایک حاملہ بیٹی بھی زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جاں بحق ہوگئی اچانک حادثہ میں اتنا بڑا جانی نقصان ہونے کے باعث علاقہ بھر کا ماحول سوگوار ہو گیا الم ناک حادثہ کی وجہ سے ہر آنکھ اشکبار تھی جبکہ مرحومین کے گھر پر کہرام مچا رہا عزیز و اقارب غم سے نڈھال دکھائی دیئے مرحومین کو نماز جنازہ کے بعد مقامی قبرستان میں دفن کردیا گیا گھریلو جھگڑوں سے دلبرداشتہ ہوکر22 سالہ شادی شدہ خاتون نے کالا پتھرپی کر خودکشی کر لی‘ چار خواتین سمیت آٹھ افراد کا اقدام خودکشی۔تفصیل کے مطابق اقبال آباد کی رہائشی 22 سالہ شادی شدہ انیلہ بی بی نے آئے روز کے گھریلو جھگڑوں سے دلبرداشتہ ہو کر کالا پتھر مشروب میں گھول کر پی لیا‘ حالت تشویشناک ہونے پر ورثاء  نے طبی امداد کے لئے شیخ زید ہسپتال منتقل کیا جہاں طبی امداد کے باوجود انیلہ بی بی جانبر نہ ہو پائی اور جسم میں زہر پھیل جانے کے باعث دم توڑ گئی۔ اقدام خودکشی کر نے والے8 افراد جن میں پکالاڑاں کی رہائشی 14 سالہ شاہدہ بی بی‘کشمور کی 22 سالہ نازیہ بی بی‘چک 38 پی کی 30 سالہ فرزانہ بی بی‘ہسپتال روڈ کی 59 سالہ مسرت بی بی‘جمالدین والی کا 20 سالہ اسد علی‘ اقبال آباد کا 22 سالہ جہانگیر‘ جمالدین والی کا 18 سالہ علی حسن اور خانپور کے رہائشی 25 سالہ زوہیب احمد کو ہسپتال میں طبی امداد فراہم کی جارہی ہے۔واش روم میں نہاتے ہوئے گر کر شدید زخمی ہونے والاضعیف العمر شخص ہسپتال میں دم توڑ گیا۔تفصیل کے مطابق خانپور کا رہائشی ضعیف العمر 85 سالہ محمد فیضان جو کہ واش روم میں نہانے کے دوران پاؤں پھسل جانے پر توازن برقرار نہ رکھتے ہوئے سر کے بل فرش پر جاگرا اور شدید زخمی ہو گیا‘ ورثاء  نے طبی امداد کے لئے شیخ زید ہسپتال منتقل کیا جہاں تین روز تک طبی امداد کے باوجود وہ جانبر نہ ہو پایا اور دم توڑ گیا۔عیدالاضحیٰ کے موقع پر ہیڈ اسلام پر منچلوں کی ہلڑ بازی کنٹرول نہ ہوسکی دریا میں نہاتے ہوئے نوجوان ڈوب کر جاں بحق

 ہوگیا موقع پر موجود لوگوں نے تیراکوں کی مدد سے نوجوان کی نعش تلاش کرلی مرنے والے کی شناخت سرفراز عمر 16 سال سکنہ جمال پور کے نام سے ہوئی مرحوم کی میت کو قائم پور ہسپتال منتقل کیا گیا بعد ازاں ضروری کاروائی کے بعد ورثاء کے حوالہ کردی گئی شہریوں مقبول،احمد،شہزاد و دیگر نے انتظامیہ کی غفلت کے باعث ہونیوالی موت پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے ذمہ داران کے خلاف کاروائی کا مطالبہ کیا ہے کرنٹ لگنے سے نو جوان ہلاک،1122نے گاڑی نہ ہو نے کا بہا نہ بنا کر ٹال دیا،پرا ئیویٹ ہسپتال لے گئے انہوں نے علاج کی بجا ئے سر کاری ہسپتال بھیج دیابروقت علاج نہ ہو نے پر دو بچوں کا باپ دم توڑ گیا،ورثاء کا احتجاج،تفصیل کے مطا بق نواحی علا قہ علی پور کا نجو رہا ئشی اختر گھر میں بجلی کی تار ٹھیک کر رہا تھا کہ اس کو کرنٹ لگ گیا ورثاء نے 1122کو کال کی تو انہوں نے کہا کہ گاڑی نہ ہے کہ کر ٹال دیا ورثا ء نے موٹر سا ئیکل ریڑھی تلا ش کی اور اس پر نو جوان کو مقا می پرا ئیویٹ سٹی ہسپتال لے جا یا گیا مگر وہاں پر بھی کسی نے ہا تھ نہ لگا یا اور غریب کو سر کاری ہسپتال بھیج دیا اس دوران مریض بری طرح تڑپتا رہا اور سر کاری ہسپتال پہنچتے ہی دم توڑ گیا اس دور میں بھی بے حسی کی انتہا ہو گئی غربت کی وجہ سے بروقت طبی امداد نہ ملنے سے دو بچوں کا باپ دم توڑ گیا محمد اختر محکمہ زرا عت میں درجہ چہارم کا ملازم تھا ورثاء نے بے حسی پر احتجاج کیا ہے اور اعلیٰ حکام سے کا روا ئی کا مطا لبہ کیا ہے مرحوم کو نما زے جنازہ کے بعد ان کے آ با ئی قبر ستان میں سپرد خا ک کر دیا گیا  ہے ٹریفک حادثہ میں شدید زخمی ہونے والے دو نوجوان جان بحق ہوگئے تفصیل کے مطابق عید الاضحی کے موقع پر پہلا حادثہ بے نظیر روڈ پر ہوا جہاں تیز رفتار بولان وین نے بے قابو ہوکر دو موٹر سائیکلوں کو ٹکر ماردی جس کے نتیجے میں 24 سالہ نوجوان سکندر علی زخموں کے تاب نہ لاتے ہوئے موقع پر دم توڑ گیا جبکہ چک 92 اسلام گڑھ کے رہائشی 18 سالہ صابر خان اور محمد عدیل شدید زخمی ہوگئے۔دوسرا حادثہ تحصیل لیاقت پور کی حدود 87 بینک روڈ چک 22اے میں ہوا جہاں تیز رفتار کار نے بے قابو ہوکر موٹر سائیکل سوار کچل ڈالے جس کے نتیجے میں 22 سالہ نوجوان عدیل فضل زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے موقع پر دم توڑ گیا جبکہ چک 24 عباسیہ کی رہائشی 19 سالہ ثوبیہ بی بی اور 18سالہ محمد احمد شدید زخمی ہو گئے‘ زخمی ہونے والے افراد کو طبی امداد کے لئے ہسپتال منتقل کردیا۔اوچ شریف تیز رفتار  3 موٹر سائیکلیں گڑھے میں جاگریں، ایک شخص جاں بحق اور 5 زخمی ہوگئے، زخمیوں کو اسپتال منتقل کردیا گیا، حادثہ تیز رفتاری اور روڈ ٹرن پر سائن بورڈ نہ ہونے کے باعث پیش آیا شتہ روز احمد پور روڈ پر دورویہ سڑک کے اختتام اور ٹرن پر سائن بورڈ نہ ہونے کے باعث تیز رفتار 3 موٹر سائیکلیں گڑھے میں گرنے کے باعث ایک نوجوان جاں بحق اور 5 زخمی ہوگئے، جاں بحق نوجوان کی شناخت چاند کے نام سے ہوئی ہے،  زخمیوں کو اسپتال منتقل کردیا گیا جن میں  سے 2  افراد کی حالت تشویشناک ہے،  افسوس ناک واقعہ سڑک کے اختتام پر ٹرن اور سائن بورڈ نہ ہونے کے باعث پیش آیا، موٹر سائیکل سوار دوست ہیڈ پنجند پر  عید کی خوشی میں گھومنے کے بعد واپس گھروں کو جارہے تھے کہ حادثہ کا شکار ہوگئے  ہیں      جواں سالہ بیٹے کی مو ت کا صد مہ برداشت نہ کرتے ماں بھی دل کا دورہ پڑنے سے بیٹے کے ساتھ ہی خالق حقیقی سے جاملی،بیٹا سانپ کے ڈسنے سے جاں بحق ہو گیاتھا، نعش دیکھتے ہی جان لیوا دل کا دورہ پڑگیا،عید کے روز ایک ہی گھر میں دو اموا ت نے کہرام مچا دیا، ماں بیٹے کی نما زِ جنازہ ادا، تفصیل کے مطابق عید کی صبح نواں کھوہ امیر شاہ کے رہائشی جمعیت علمائے اسلام کے مقامی راہنماء پیر امیر شاہ قریشی کے بائس سالہ بیٹے کو کھیتوں میں کام کے دوران سانپ نے کاٹ لیا جسے تحصیل ہیڈ کواٹر ہسپتال لایا گیا جہاں وہ جسم میں زہرپھیل جانے ے خالق حقیقی جاملا جسکی معیت بذریعہ ایمبولنس گھر لائی گئی تو متو فی کی ماں بیٹے کی نعش دیکھ کر غش کھاتے چارپائی پر جاگری اور دم توڑ گئی، عید کے روزایک ہی  گھرمیں دو اموات سے علاقہ میں کہرام بر پا ہو گیا، نماز جانزہ کے لئے جب ماں بیٹے کی میتیں اٹھا ئی گئیں تو لو گ دہاڑیں مار مار کر روتے دکھائی دئیے، نما ز جنازہ میں علمائے کرام، سیاسی،سماجی شخصیا ت سمیت شہریوں کی کثیرتعداد شریک ہو ئی۔      مظفرگڑھ کے نواحی علاقے دائرہ دین پناہ میں اڈہ ٹوپل پر افسوسناک ٹریفک حادثہ ہوا ہے حادثہ کے نتیجے میں اعجاز بھٹی نامی نوجوان جاں بحق جا  کوٹ ادو پولیس نے موقع پر پہنچ کر قانونی کاروائی کا آغاز کر دیا ھے اور لاش کو تحصیل ھیڈ کوارٹر ھسپتال کوٹ ادو منتقل کر دیا ھے حادثہ ڈالہ ڈرائیور کی تیز رفتاری اور لاپرواھی کی وجہ سے پیش آیا ھے جو ڈالہ چھوڑ کر فرار ھو گیا۔ راجن پور،عید کے پہلے،دوسرے اور تیسرے روز راجن پور بھر میں مختلف ٹریفک حادثات میں خا تون سمیت تین افراد جاں بحق جبکہ دس سے زائد زخمی ہوگئے ریسکیو ذرائع نے بتایا کہ زیادہ تر حادثات موٹرسائیکل اور کاروں کے درمیان ہوئے جبکہ محمد پوردیوان میں ایک نوجوان لڑکاون ویلنگ کرتے زخمی ہوا جسے ٹراماسنٹر ڈیرہ غازی خان منتقل کردیا گیا ہے۔ عید کے دوسرے روز نواحی چک بھٹہ337کارہائشی محمدسعید ارائیں کام کے دوران دیوار کے سائے میں سستانے کے لئے بیٹھا تو بدقسمتی سے اس پر دیوار گر گئی جس سے وہ موقع پر ہی جاں بحق ہوگیا۔جسے نماز جنازہ کے بعد سپرد خاک کر دیا گیا۔موٹر سائیکلوں کے تصادم میں شدید زخمی ہوئے والا 16 سالہ نوجوان دم توڑ گیا۔   میر پور ماتھیلو کا رہائشی 16 سالہ ضمیر علی جوکہ اپنی موٹرسائیکل پر سوار ہو کر دوستوں کو ملنے جارہاتھا کہ سامنے سے آنے والے موٹر سائیکل سوار سے بے قابو ہوکر ٹکرا گیا اور شدید زخمی ہو گیا‘ ورثاء نے ضمیرعلی کو طبی امداد کے لئے شیخ زید ہسپتال رحیم یار خان منتقل کیا جہاں طبی امداد کے باوجود وہ جانبر نہ ہو پایا اور دم توڑ گیا۔ ٹرو کے روز  دریائے ستلج ہیڈ اسلام کے قریب دو کاروں میں خوفناک تصادم کے نتیجہ میں دو افراد جاں بحق جبکہ بارہ افراد زخمی ہوگئے جاں بحق ہونے والوں میں آٹھ سالہعبدالرحمان اور مقصودہ بی بی شامل ہیں جبکہ زخمیوں میں اقرا۔شعیب محمد رشید فاطمہ ارفا وغیرہ شامل ہیں۔ تحصیل کوٹ ادو کے علاقے بیٹ خادم والی کے قریب دریائے سندھ میں نہاتے ہوئے ایک شخص ڈوب کر لاپتہ ہو گیا۔ جس کی تلاش کے لیے گزشتہ روز سے ہی ریسکیو سرچ آپریشن جاری ھے ریسکیو زرائع  کے مطابق گزشتہ روز احسان پور کا رہائشی بلال ولد غلام حیدر عمر 28 سال  اپنے رشتے داروں کے گھر بیٹ خادم والی دعوت پر گیا تھا۔ دریائے سندھ کے کنارے نہاتے ہوئے اپنا توازن برقرار نہ رکھ سکا اور گہرے پانی میں  ڈوب کر لاپتہ ہو گیا تھا  واقع کی اطلاع ملنے پر ریسکیو 1122 کی واٹر سرچ ٹیم نء بروقت رسپانس کرتے ھوئے گزشتہ روز سے  ڈوب کر لاپتہ ہونے والے شخص کی تلاش کے لیے ریسکیو آپریشن جاری رکھا  ہوا ہے۔

حادثات

مزید :

ملتان صفحہ آخر -