دوپہر کا کھانا نہ کھانے اور مردانہ طاقت کے درمیان گہرا تعلق تازہ تحقیق میں سامنے آگیا

دوپہر کا کھانا نہ کھانے اور مردانہ طاقت کے درمیان گہرا تعلق تازہ تحقیق میں ...
دوپہر کا کھانا نہ کھانے اور مردانہ طاقت کے درمیان گہرا تعلق تازہ تحقیق میں سامنے آگیا

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) جنسی کمزوری کے شکار مرد ’ویاگرا‘ جیسی گولیاں پھانکنے پر مجبور ہوتے ہیں جو انتہائی سنگین مضراثرات کی حامل ہوتی ہیں۔ اب سائنسدانوں نے جنسی کمزوری سے نجات کا ایک ایسا آسان ترین طریقہ بتا دیا ہے کہ ان مضرصحت ادویات سے آپ کی جان چھوٹ سکتی ہے۔ میل آن لائن کے مطابق یونیورسٹی آف کیلیفورنیا کے سائنسدانوں نے اپنی تحقیق میں بتایا ہے کہ صرف دوپہر کا کھانا چھوڑ دینے سے مردوں کی جنسی کمزوری میں اتنی ہی کمی آ سکتی ہے جتنی کہ ویاگرا جیسی گولیاں کھانے سے۔ 

اس تحقیقی میں سائنسدانوں نے 400سے زائد ادھیڑ عمر اور عمررسیدہ مردوں پر تجربات کیے۔ نتائج میں انہوں نے بتایا کہ فاقہ کرنے یا دوسرے لفظوں میں روزہ رکھنے سے مردوں کو جنسی کمزوری سے نجات ملتی ہے اور ان میں عضو مخصوصہ کی ایستادگی کا مسئلہ ختم ہو جاتا ہے۔ سائنسدانوں کا کہنا تھا کہ ”جو مرد ایستادگی کے مسئلے کا شکار ہیں اور وہ ہفتے میں دو سے تین دن دوپہر کا کھانا چھوڑ دیں تو ایک سال کے عرصے میں ان کا یہ مسئلہ یکسر ختم ہو جائے گا۔ جو مرد باقاعدگی سے ہفتے میں دو سے تین بار لنچ چھوڑتے اور فاقہ کرتے ہیں ان کی جنسی صحت فاقہ نہ کرنے والے مردوں کی نسبت دو گنا بہتر رہتی ہے۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -