مختصر لباس پہنے خاتون پولیس اہلکار کی ٹک ٹاک ویڈیو نے ہنگامہ برپا کردیا

مختصر لباس پہنے خاتون پولیس اہلکار کی ٹک ٹاک ویڈیو نے ہنگامہ برپا کردیا
مختصر لباس پہنے خاتون پولیس اہلکار کی ٹک ٹاک ویڈیو نے ہنگامہ برپا کردیا

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) یونیفارم میں ٹک ٹاک ویڈیو بنانا نیویارک پولیس کی ایک خوبرو خاتون آفیسر کو مہنگا پڑ گیا۔ اعلیٰ حکام نے انکوائری شروع کر دی۔ میل آن لائن کے مطابق اس خاتون آفیسر کا نام کرسٹین گیلگینو ہے جو نیویارک کے علاقے برونکس کی رہائشی ہے۔ اس نے ٹک ٹاک پر ڈانس کی ایک ویڈیو پوسٹ کی جو پوسٹ ہوتے ہی وائرل ہو گئی۔ اس ویڈیو میں خاتون نے شرٹ پولیس یونیفارم کی پہن رکھی ہوتی ہے جبکہ اس کے نیچے شارٹس پہن رکھے ہوتے ہیں اور رقص کر رہی ہوتی ہے۔

رپورٹ کے مطابق اپنی یونیفارم کی شرٹ میں نیم برہنہ ہوکر ویڈیو بنانے پر لوگوں نے کرسٹین کو کڑی تنقید کا نشانہ بنانا شروع کر دیا اور جب یہ ویڈیو نیویارک پولیس کے اعلیٰ حکام کے نوٹس میں آئی تو انہوں نے کرسٹین کے خلاف انکوائری شروع کر دی۔ نیویارک پولیس ڈیپارٹمنٹ کی طرف سے جاری ایک بیان میں تصدیق کی گئی ہے کہ ڈیپارٹمنٹ کرسٹین کے خلاف انکوائری کر رہا ہے۔ ترجمان کا کہنا تھا کہ کرسٹین اس ویڈیو کے ذریعے ڈیپارٹمنٹ کی سوشل میڈیا پالیسی کی خلاف ورزی کی مرتکب ہوئی ہے جس پر اس کے خلاف ضابطے کی کارروائی کی جائے گی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -