پانچ پاکستانی فلموں کی چین میں نمائش شروع ، چین کا پاکستانی فلم ''پرواز ہے جنون'' درآمد کرنے کا فیصلہ

پانچ پاکستانی فلموں کی چین میں نمائش شروع ، چین کا پاکستانی فلم ''پرواز ہے ...
 پانچ پاکستانی فلموں کی چین میں نمائش شروع ، چین کا پاکستانی فلم ''پرواز ہے جنون'' درآمد کرنے کا فیصلہ

  

بیجنگ(آئی این پی )چین کی فلم ایڈمنسٹریشن نے کہا ہے کہ پاکستان کی پانچ بہترین فلموں تک رسائی سے چینی ناظرین پاکستانی ثقافت کے بارے میں مزید جان سکتے ہیں اور اس کی خوبصورتی سے لطف اندوز ہو سکتے ہیں۔

چائنا اکنامک نیٹ کے مطابق چائنا فلم آرکائیو(معرف سی ایف اے)کی میزبانی میں بیجنگ میں پاکستانی سفارت خانے اور چائنا فلم ایڈمنسٹریشن کے مشترکہ تعاون سے پہلا پاکستان فلم ویک 4 اگست کو چین کے شہر بیجنگ میں شروع ہو ا۔ فلم ویک چین اور پاکستان کے درمیان سفارتی تعلقات کے قیام کی 70 ویں سالگرہ کے موقع پر منعقد ہونے والی سرگرمیوں کے سلسلے میں سے ایک ہے اور 4 اگست سے 7 اگست تک 5 پاکستانی فلمیں پیش کی جائیں گی۔ ایک چینی فلمی مداح نے پرجوش انداز میں کہا میں نے 2018 کی اردو زبان کی فلم پرواز ہے جنون کو پہلے بھی دیکھا اور مجھے یہ پسند ہے! میں ان 5 پاکستانی فلموں کو دیکھنے کے لیے بڑہ شدت سے انتظار کر سکتا ہوں۔ انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان کے بہترین لڑاکا پائلٹ بننے والے محب وطن نوجوان کیڈٹس کے گروپ کی آزمائشوں اور تکلیفوں کی کہانی نے چینی سامعین کو بہت متاثر کیا۔

چائنا اکنامک نیٹ کے ساتھ خصوصی انٹرویو میں چائنا فلم امپورٹ اینڈ ایکسپورٹ کارپوریشن کے صدر شیاو پنگ نے کہا کہ2021 چین اور پاکستان کے درمیان سفارتی تعلقات کے قیام کی 70 ویں سالگرہ کا سال ہے، ہم دونوں ممالک کے درمیان فلم انڈسٹری میں تبادلے اور تعاون کو مضبوط بنانے کے لیے ایک موقع کے طور پر پرواز ہے جنون درآمد کرنا چاہیں گے۔

شیا پنگ نے بتایا کہ مستقبل میں چین پاکستانی فلموں کے لیے تیار رہے گا، ان کی انواع اور مارکیٹ کی کارکردگی کو مدنظر رکھے گا اور چینی ناظرین کے لیے موزوں انتخاب کرے گا۔ بیجنگ میں پاکستانی سفارت خانے کے مطابق، پہلی پاکستانی فلم، موٹر سائیکل گرل، ایک بائیوگرافیکل ایڈونچر ڈرامہ فلم ہے جو کہ ایک نوجوان موٹر سائیکلیسٹ زینت عرفان کی زندگی پر مبنی ہے۔ 18 سالہ زینت عرفان کا تعلق لاہور شہر سے ہے۔ وہ راتوں رات سنسنی کا شکار ہو گئی جب اس نے شمالی پاکستان کے ایک چیلنجنگ پہاڑی علاقے سے موٹرسائیکل کے ذریعے سفر کیا تاکہ اپنے مرحوم والد کی خواہش کو پورا کرنے کے لیے چین پاکستان بارڈر ا خنجراب پاس جائے۔یہ فلم خواتین کو بااختیار بنانے کے بارے میں ہے جو پاکستانی خواتین کی دقیانوسی تصویر کو توڑتی ہے۔ یہ پاکستان کے شمالی علاقوں کی خوبصورتی کو بھی اپنی گرفت میں لے لیتی ہے۔ دوسری چار فلموں میں  بلائنڈ لو (2016)، پنجاب نہیں جاؤنگی (2017)، بن روئے (2015)، اور ہو من جہاں (2015)  شامل ہیں۔

مزید :

تفریح -