مقبوضہ کشمیر کو پولیس اسٹیٹ اور قبرستان میں تبدیل کر دیا گیا ہے‘زمرودہ حبیب

مقبوضہ کشمیر کو پولیس اسٹیٹ اور قبرستان میں تبدیل کر دیا گیا ہے‘زمرودہ حبیب

سرینگر (اے پی پی) مقبوضہ کشمیر کی حریت رہنما زمرودہ حبیب نے کہا ہے کہ کشمیرکو ایک پولیس اسٹیٹ اور بڑے قبرستان میں تبدیل کر دیاگیا ہے جہاں شہریوں خاص طورپر نوجوانوں کی بڑی تعداد میں قبریں موجود ہیں۔کشمیر میڈیا سروس کے مطابق زمرودہ حبیب نے انسانی حقوق کی مسلسل پامالیوں کے خلاف پریس انکلیو سرینگر میں خواتین کارکنوں کے ہمراہ ایک احتجاج کرتے ہوئے عالمی برادری پر زوردیا کہ وہ مقبوضہ علاقے میں حقوق انسانی کی بدترین صورتحال کا سخت نوٹس لے ۔ مظاہرین نے پلے کارڈ ز اتھا رکھے تھے جن پر وادی کشمیر میں جاری انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں سے متعلق نعرے درج تھے اورسرینگر سینٹرل جیل میں بھارتی فوج کی سینٹرل ریزرو پولیس فورس کے اہلکاروں کی طرف سے جیل میں ملاقات کیلئے آنے والی کشمیری خواتین سے کئے گئے توہین آمیز سلوک کی مذمت کے علاوہ جیل میں کشمیری وویمن پولیس اہلکاروں کی تعیناتی کا مطالبہ کیا گیا تھا ۔اس موقع پرزمرودہ حبیب نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ کشمیری عوام کو طویل عرصے سے ریاستی جبر ،فوجی تسلط اوربڑے پیمانے پرانسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا نشانہ بنایا جارہا ہے ۔انہوںنے کہاکہ کشمیری نوجوانوںپر پبلک سیفٹی ایکٹ جیسے کالے قوانین لاگو کئے جارہے ہیں اور رہائی کے بعد بھی انہیں پولیس اسٹیشنوں میں پیش ہونے کا حکم دیا جاتا ہے ۔ انہوںنے کہاکہ کشمیریوں کی آواز کو طاقت کے بل پر دبایا جا رہا ہے ۔

مزید : عالمی منظر


loading...