اقوام متحدہ کی قراردادیں مسئلہ کشمیر کے حل کی قانونی بنیاد فراہم کرتی ہیں‘پروفیسر عبدالغنی بٹ

اقوام متحدہ کی قراردادیں مسئلہ کشمیر کے حل کی قانونی بنیاد فراہم کرتی ...

سرینگر (اے پی پی) مقبوضہ کشمیر میں کل جماعتی حریت کانفرنس کے سینئر رہنما پروفیسر عبدالغنی بٹ نے کہا ہے کہ اقوام متحدہ کی قراردادیں مسئلہ کشمیر کے حل کی بنیادفراہم کرتی ہیں ۔انہوںنے مزید کہاکہ اگر کشمیر بارے عالمی ادارے کی کوئی قرارداد نہ بھی ہوتی تب بھی کشمیر ایک تنازعہ ہی ہوتا کیونکہ یہ مسئلہ 1931میں اقوام متحدہ کے قیام سے قبل سے چلا آرہا ہے ۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق پروفیسر عبدالغنی بٹ نے سرینگر میں ایک میڈیا انٹرویو میںکہاکہ کشمیری عوام کو ہی اپنے مستقبل کا فیصلہ کرنا ہو گا ۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ ہمیں مذاکرات کے ذریعے مسئلے کا حل تلاش کرنے کیلئے آگے بڑھنا چاہیے۔ انتخابات کے بارے میں پروفیسر عبدالغنی بٹ نے کہا کہ ہم مسئلہ کشمیر کے حل تک اس عمل کا حصہ نہیں بنیں گے ۔ انہوںنے یقین دلایا کہ مسئلہ کشمیر کے حل کے بعد بھی وہ انتخابی عمل میں حصہ نہیں لیں گے ۔ انہوںے کہاکہ حریت کانفرنس انتخابات کیلئے سیاست نہیں کر رہی ہے ۔ وزیر اعظم پاکستان محمد نواز شریف کے مشیر امورخارجہ سرتاج عزیز کے ساتھ نئی دلی میںملاقا ت کے بارے میں ایک سوال کے جواب میں پروفیسر بٹ نے کہاکہ ہم سیاسی اور تاریخی صورتحال اور گزشتہ سات دہائیوں کے دوران کشمیر میں ہونے والی پیش رفت کے تناظر میں مسئلہ کے بارے میں تبادلہ خیال کیا ۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے بھی عالمی سیاسی صورتحال کے حوالے سے بھی کشمیر پر بات چیت کی اور کہاکہ ہم مسئلہ کشمیر کا حل چاہتے ہیں ۔ایک اور سوال کے جواب میں سینئر حریت رہنما نے کہاکہ وہ کشمیریوں کی مزاحمت کی ہر شکل میں حمایت کرتے ہیں ۔

مزید : عالمی منظر


loading...