مشرف غداری کیس: خصوصی عدالت کے قیام کیخلاف درخواست قابل سماعت ہونے سے متعلق فیصلہ محفوظ، پراسیکیوٹرکو گائیڈ لائن مل گئی

مشرف غداری کیس: خصوصی عدالت کے قیام کیخلاف درخواست قابل سماعت ہونے سے متعلق ...
مشرف غداری کیس: خصوصی عدالت کے قیام کیخلاف درخواست قابل سماعت ہونے سے متعلق فیصلہ محفوظ، پراسیکیوٹرکو گائیڈ لائن مل گئی

  


اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)اسلام آباد ہائی کورٹ نے سابق صدر پرویز مشرف پر غداری کا مقدمہ چلانے کیلئے قائم کردہ خصوصی عدالت کے قیام کیخلاف درخواست کے قابل سماعت ہونے یا ہونے پر فیصلہ محفوظ کر لیاجبکہ سپیشل پراسیکیوٹراکرم شیخ کو بھی مقدمے کے لیے گائیڈلائن مل گئی۔سابق صدر پرویز مشرف کے خلاف آرٹیکل 6 کے تحت کارروائی کیلئے قائم کی گئی خصوصی عدالت کے قیام کے خلاف درخواست کی سماعت اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس نور الحق قریشی نے کی۔جسٹس نور الحق قریشی نے درخواست گزار ریاض حنیف ایڈووکیٹ سے استفسار کیا کہ کس شق کے تحت آپ نے درخواست اسلام آباد ہائیکورٹ کی،کیا اسلام آباد ہائیکورٹ اس درخواست کی سماعت کر سکتی ہے؟انہوں نے کہا کہ آپ متاثرہ شخص نہیں، حق دعویٰ نہیں بنتا۔ جسٹس نور الحق قریشی نے درخواست گزار کو ہدایت کی کہ وہ درخواست مناسب فورم پر لے کر جائیں۔ درخواست گزار نے عدالت سے استدعا کی اسکی درخواست سماعت کیلئے منظور کی جائے، اعتراضات دو رہو جائیں گے۔عدالت نے درخواست کے قابل سماعت ہونے یا نہ ہونے پر فیصلہ محفوظ کر لیا۔ دوسری طرف نجی ٹی وی چینل کے ذرائع نے بتایاہے کہ پرویز مشرف غداری کیس میں مقرر پراسیکیوٹر اکرم شیخ نے وزیراعظم نواز شریف سے ملاقات کی جس دوران وزیراعظم نواز شریف نے اکرم شیخ کو مقدمے سے متعلق گائیڈلائن دیدی۔

مزید : اسلام آباد /اہم خبریں


loading...