عالمی معرکہ ۔۔۔مردوں نے عورتوں کی ’کمزوری‘ پکڑ ہی لی

عالمی معرکہ ۔۔۔مردوں نے عورتوں کی ’کمزوری‘ پکڑ ہی لی
عالمی معرکہ ۔۔۔مردوں نے عورتوں کی ’کمزوری‘ پکڑ ہی لی

  


لندن (بیورورپورٹ)پینی سونیا کے سائنسدانوں نے دس سال کی طویل ترین تحقیق کے بعد کہا ہے کہ عورت اور مرد کا دماغ مختلف ہوتا ہے جو حیران کن ہے اس سلسلہ میں 949مردوں اور عورتوں کا ہائی ٹکنیک سٹی سکین اور ایم آر آئی کیا گیا اور دماغ کے مختلف حصوں کو گراف بنا کر ایک دوسرے سے ملایا گیا تو معلوم ہوا کہ مردوں کا دماغ نوجوانی میں زیادہ تیزی کے ساتھ کام کرتا ہے اور درست سگنل پکڑتا ہے جبکہ خواتین کو اس سلسلہ میں کئی مرتبہ سوچنا پڑتا ہے دنیا کی یہ سب سے بڑی ہونیوالی تحقیق ہے جس میں 428مرد اور 521خواتین کو تجربے سے گزارا گیا۔ یہ تحقیق اسلامی اصولوں کے عین مطابق کی گئی ہے کہ ایک مردہ اور دو عورتوں کی گواہی برابر ہے اور اس پر دس سال سے تحقیق کی جا رہی تھی ۔ ان سائنسدانوں نے ا ایم آر آئی کی گئی تصاویر بھی جاری کر دی ہیں ۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...