ضلعی حکومت مال روڈ پر مظاہروں اور جلسوں پر پابندی لگائے: لاہورچیمبر

ضلعی حکومت مال روڈ پر مظاہروں اور جلسوں پر پابندی لگائے: لاہورچیمبر

لاہور (کامرس رپورٹر) لاہو رچیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری نے ضلعی حکومت پر زور دیا ہے کہ وہ مال روڈ پر احتجاجی مظاہروں، جلسوں اور ریلیوں پر عائد پابندی پر انتہائی سختی سے عمل درآمد کرائے کیونکہ اس سے اس اہم تجارتی مرکز پر کاروبار تباہ اور ٹریفک کے سنگین مسائل پیدا ہورہے ہیں۔ ایک بیان میں لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر شیخ محمد ارشد، سینئر نائب صدر الماس حیدر اور نائب صدر ناصر سعید نے کہا کہ مال روڈ نہ صرف تاریخی حوالے سے پہچان رکھتی ہیں بلکہ ملک کا بہت اہم تجارتی مرکز بھی ہے جبکہ اس کے سنگم پر ہال روڈ الیکٹرانکس مارکیٹ اور دیگر بہت سی مارکیٹیں ہیں جہاں روزانہ کروڑوں کا کاروبار ہوتا اور حکومت کو بھاری محاصل ملتے ہیں۔ لاہور چیمبر کے عہدیداروں نے کہا کہ قانون کے مطابق مال روڈ پر جلسے جلوس اور احتجاجی مظاہرے کرنے پر پابندی عائد ہے لیکن ہر روز اس کی دھجیاں اڑاتے ہوئے مال روڈ کو بلاک کردیا جاتا ہے جس کی وجہ سے نہ صرف ٹریفک کا نظام بْری طرح متاثر ہوتا ہے بلکہ گاہکوں کی آمد و رفت بند ہونے سے تاجروں کا کاروبار بھی برباد ہوجاتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ اس معاملے پر متعلقہ اداروں کی خاموشی کی وجہ سے سڑکیں بلاک کرنے کا عمل شہر کے دیگر حصوں تک بھی جا پہنچا ہے۔ انہوں نے کہا کہ احتجاج کرنا سب کا بنیادی حق ہے لیکن اس کی آڑ میں تجارتی و معاشی سرگرمیاں تباہ نہیں ہونی چاہئیں جبکہ قانون پر عمل درآمد بھی ہر ایک کی ذمہ داری ہے۔

انہوں نے کہا کہ بے دھڑک احتجاجی مظاہروں اور جلسے جلوسوں سے یہ تاثر مل رہا ہے کہ لاہور میں قانون نافذ کرنے والے اداروں کی رٹ نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ جلاؤ گھیراؤ کے خوف سے مال روڈ کے تاجروں کو دکانیں بند کرنا پڑتی ہیں جس کی وجہ سے انہیں بھاری نقصان کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ضلعی حکومت اور دیگر متعلقہ ادارے اس صورتحال کا نوٹس لیں اور مال روڈ پر احتجاجی مظاہرے کرنے پر عائد پابندی پر انتہائی سختی سے عمل درآمد کرائیں جبکہ جلسے جلوسوں اور ریلیوں کے لیے ناصر باغ مختص کردیا جائے۔

مزید : کامرس