دہشتگرد عناصر کراچی میں امن قائم ہوتا نہیں دیکھ سکتے،میاں مقصود احمد

دہشتگرد عناصر کراچی میں امن قائم ہوتا نہیں دیکھ سکتے،میاں مقصود احمد

لاہور(نمائندہ خصوصی)امیرجماعت اسلامی پنجاب میاں مقصود احمدنے کراچی میں فوجی گاڑی پرحملے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہاہے کہ ایسامحسوس ہوتا ہے کہ دہشتگردعناصر کراچی میں امن قائم ہوتا نہیں دیکھ سکتے اس لئے وہ ایک بار پھرکراچی کے حالات کوخراب کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔گزشتہ30سالوں میں کراچی میں قتل وغارت گری کے واقعات میں ملوث مجرموں کوعبرتناک سزاؤں کے بغیر امن قائم نہیں ہو سکتا ۔ سیاسی مصلحتوں سے بالاترہوئے بغیر امن راگ دھوکہ ہے،سانحہ بلدیہ جیسے واقعات کااگرمنطقی نتیجہ آچکا ہوتاتوفوجی گاڑیوں پر حملے نہ ہوتے۔

حکومت کو چاہیے کہ وہ اپنی آئینی وقانونی ذمہ داری اداکرتے ہوئے دہشت گردی کی وارداتوں میں ملوث ملک دشمنوں کاہرجگہ تعاقب کرے اوران کو انصاف کے کٹہرے میں لا ئے ۔ انہوں نے کہاکہ کراچی میں آپریشن کے مثبت نتائج برآمد ہوئے اس پرمزید کام کرنے کی ضرورت ہے۔وزیر اعلیٰ سندھ کی زیر صدارت ہونے والے اپیکس کمیٹی کے اجلاس میں 200پراسیکیوٹرز،30نئی انسداددہشتگردی عدالتیں اور 8000 پولیس اہلکاروں کی تعیناتی اگرچہ اچھافیصلہ ہے مگر ضرورت اس امر کی ہے کہ تقرریاں غیر سیاسی اور میرٹ کوملحوظ نظر رکھاجائے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4