اسرائیل سے تعلقات کا قیام فلسطینی شہیدوں کے خون کیساتھ غداری ہوگی، حماس

اسرائیل سے تعلقات کا قیام فلسطینی شہیدوں کے خون کیساتھ غداری ہوگی، حماس

غزہ (این این آئی) حماس نے اسرائیل کیساتھ کسی بھی شکل میں تعلقات کے قیام کی تجاویز کو مسترد کرتے ہوئے اپنے دیرینہ موقف کا اعادہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ صہیونی دشمن سے تعلقات کا مطلب ہزاروں معصوم شہیدوں کے خون سے غداری ہوگا۔حماس نے اپنے تازہ بیان میں عرب ممالک اور مسلم دنیا پر زور دیا ہے کہ وہ صہیونی دشمن کی جانب سے قربت کی کوششوں کی پاؤں کی ٹھوکر رسید کرتے ہوئے یہ ثابت کریں کہ مسلمان صہیونیوں کیساتھ کسی قسم کے تعلقات قائم نہیں کرسکتے ہیں۔بیان میں کہا گیاہے کہ اسرائیل ایک سازش کے تحت مسلمان ملکوں میں دخل اندازی کرتے ہوئے ان سے تعلقات کے قیام کیلئے کوشاں ہے مگر فلسطینی قوم کو یقین ہے کہ اسرائیل کی یہ تمام سازشیں ناکام ہونگی۔بیان میں کہا گیا ہے کہ وقت گزرنے کیساتھ ساتھ صہیونی ریاست کے فلسطینیوں پر مظالم میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔ صہیونی فوج آئے روز فلسطینیوں پر ظلم ڈھا رہی ہے اور مسجد اقصیٰ کی تقسیم کی بیمار ذہنیت کی عکاس سازشیں مسلسل جاری ہیں مگر حماس اور فلسطینی قوم مل کر اسرائیلی ریشہ دوانیوں کو ناکام بنائینگے۔

حماس نے فلسطین میں جاری تحریک انتفاضہ القدس کی حمایت کی اور پوری مسلم دنیا سے مطالبہ کیا کہ وہ فلسطینیوں انتفاضہ القدس کو کامیاب بنانے کیلئے مدد اور نصرت کریں۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ فلسطینی قوم وطن عزیز کی آزادی اور مقدس مقامات کے دفاع کیلئے اپنی جانیں نچھاور کررہے ہیں۔ فتح ونصرت فلسطینی قوم کی ہوگی اور دشمن کو شرمناک شکست کا سامنا کرنا پڑیگا۔

مزید : عالمی منظر