دارالعوام کی اجازت کے بعد شام پر برطانوی حملے شروع

دارالعوام کی اجازت کے بعد شام پر برطانوی حملے شروع

لندن (آن لائن)برطا نوی پارلیمان کی جانب سے شام میں شدت پسند تنظیم دولتِ اسلامیہ کے خلاف فضائی حملوں کی اجازت ملنے کے بعد چند ہی گھنٹوں بعد برطانیہ نے شام میں فضائی کارروائیاں شروع کر دی ہے۔جمعرات کو برطانیہ کی وزارتِ دفاع نے تصدیق کی ہے کہ چار برطانوی ٹورنیڈو جنگی طیاروں نے شام میں پہلے فضائی حملے کیے ہیں۔برطانوی دارالعوام نے شام میں فضائی حملوں کی منظوری دے دی وزارت دفاع نے بتایا کہ قبرص میں برطانوی ایئر فورس کے فضائی اڈے سے چار برطانوی ٹورنیڈو جنگی طیاروں نے پرواز کی اور شام میں بمباری کی ہے۔ یاد رہے کہ گذشتہ روز برطانوی دارالعوام نے شدت پسند تنظیم دولتِ اسلامیہ کے خلاف شام میں فضائی کارروائیاں کرنے کا اختیار دے دیا تھا۔بدھ کو ہونے والی ووٹنگ میں 397 اراکین نے شام میں دولت اسلامیہ کے خلاف فضائی کارروائیوں کی حمایت میں ووٹ دیا ۔

جبکہ اس کی مخالفت میں 223 ووٹ پڑے تھے۔برطانوی وزیراعظم ڈیوڈ کیمرون نے ایوان میں بحث کا آغاز کرتے ہوئے کہا کہ ان کارروائیوں کا مقصد دہشت گرد حملوں سے’برطانوی عوام کو محفوظ رکھنا ہے۔‘ڈیوڈ کیمرون نے کہا کہ ’انھوں نے ملک کو محفوظ رکھنے کے لیے صحیح فیصلہ لیا ہے۔‘دوسری جانب اس فیصلے کے مخالفین کا کہنا ہے کہ یہ ایک غلطی ہے۔ ایک اندازے کے مطابق لیبر جماعت کے 67 ارکان پارلیمان نے بھی حکومت کی حمایت میں ووٹ ڈالے ہیں ۔

مزید : عالمی منظر