پولیس قاتلوں کوگرفتار کرنے میں ناکام،لواحقین ایک سال بعد بھی سراپا احتجاج

پولیس قاتلوں کوگرفتار کرنے میں ناکام،لواحقین ایک سال بعد بھی سراپا احتجاج

لاہور (اپنے نامہ نگار سے)مصری شاہ کے علاقہ میں 1سال قبل قتل ہو نے والے 22سالہ نو جوان اسد کے قاتلوں کو پولیس گرفتار نہیں کر سکی ۔متاثرہ خاندان نے الزام لگایا ہے کہ پولیس ملزمان کو تلاش کرنے کی بجائے ہروقت ریڈ کرنے کے چکر میں ان سے مبینہ طور پر رقم کا مطالبہ کر تی رہتی ہے، پولیس نے ملزمان تک پہنچنے کے لیے کسی شخض گو گرفتار کیا اور نہ ہی مقتول کے موبائل کا ڈیٹا حاصل کیا ہے۔اعلیٰ حکام سے اپیل ہے کہ ہمیں انصاف فراہم کیا جا ئے ۔تفصیلا ت کے مطابق 1سال قبل مصری شاہ کا رہائشی اسد گھر کے باہر کھڑا تھا کہ 4نامعلوم مو ٹر سائیکل سواروں نے فائرنگ کر کے اسے شدید زخمی کر دیا اور موقع سے فرار ہو گئے۔زخمی کو فوری طبی امداد کے لیے میو ہسپتال لے جا یا گیا جہاں وہ جاں بحق ہو گیا۔مقتول کے بھائی اویس اور کزن نے روز نامہ پاکستان سے گفتگو کر تے ہو ئے بتایا کہ قتل ہو ئے ایک سال ہو گیا ہے لیکن ابھی تک پولیس ملزمان کو تلاش نہ کر سکی ۔ہماری اعلیٰ حکام سے اپیل ہے کہ ملزمان کو ٹریس کر کے ہمیں انساف فراہم کیا جا ئے ۔نامعلوم ملزمان کی طرف سے ہمیں مقدمہ کی پیروی سے روکنے کے لیے جان سے مارنے کی دھمکیا ں مل رہی ہیں ہماری اعلیٰ حکام سے اپیل ہے کہ ہمیں انصاف فراہم کیا جا ئے۔

مزید : علاقائی