بھارت کیساتھ کشمیر سمیت تمام معاملات پر بات چیت کیلئے تیار ہیں ،پاکستان

بھارت کیساتھ کشمیر سمیت تمام معاملات پر بات چیت کیلئے تیار ہیں ،پاکستان

اسلام آباد (آئی این پی) ترجمان دفتر خارجہ قاضی خلیل اللہ نے کہا ہے کہ پاکستان بھارت کے ساتھ کشمیر سمیت تمام معاملات پر بات چیت کرنے کیلئے تیار ہے ،پاکستانی قیادت نے بھارت کے ساتھ نتیجہ خیز مذاکرات کی بات کی، وزیراعظم بھارتی ہم منصب سے ملاقات سے متعلق بیان دے چکے ہیں،مزید کچھ کہنے کی ضرورت نہیں ،سشما سوراج کی ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں شمولیت کے حوالے سے تصدیق کا انتظار ہے،بھارتی سفیر کا پاک افغان تعلقات کے حوالے سے بیان سفارتی آدا ب کی خلاف ورزی ہے،تیونس میں صدارتی گارڈز پر حملے کی مذمت کرتے ہیں ۔وہ جمعرات کودفتر خارجہ میں ہفتہ وار نیوز بریفنگ دے رہے تھے۔ترجمان دفتر خارجہ نے کہاکہ پیرس میں بھارت کے افغانستان میں تعینات سفیر کا پاک افغان تعلقات کے حوالے سے بیان سفارتی آدا ب کے خلاف ہے،کسی سفیر کا اپنے میزبان ملک اور تیسرے ملک کے تعلقات کے حوالے سے بیان دینا نامناسب ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت نے دہلی میں پاکستانی اہلکار پر جاسوسی کے الزامات اور تحقیقات سے متعلق آگاہ نہیں کیا پاکستانی انٹیلی جنس ایجنسی پر الزامات بے بنیاد ہیں،بھارت ہمیشہ پاکستانی ایجنسیوں پر الزام لگاتا ہے۔ بھارت نے ماضی میں بھی ایسے الزامات لگائے مگر کبھی بھی ثابت نہیں ہوئے۔قاضی خلیل اللہ نے کہا کہ ہارٹ آف ایشیا کانفرنس کا افتتاح پاکستانی وزیر اعظم نواز شریف اور افغان صدراشرف غنی کریں گے، افغان صدر کے دورہ پاکستان کی باقاعدہ اطلاع موصول نہیں ہوئی۔ انہوں نے کہا کہ ہارٹ آف ایشیا کانفرنس کا مقصدافغانستان اور ہمسایہ ممالک کے ساتھ تعلقات بہتر بنانا ہے، چین ، تاجکستان، کرغزستان ، ایران اور افغانستان کی شرکت کنفرم ہے بھارتی وزیر خارجہ کی آمد سے متعلق باقاعدہ آگاہ نہیں کیا گیا۔ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ افغان طالبان کے امیر ملااخترمنصور کے زخمی ہونے کی اطلاعات میڈیا سے سنی ہیں ان کے مارے جانے یا زخمی ہونے سے متعلق کوئی اطلاعات نہیں ہیں۔سعودی عرب کی جیلوں میں 5 ہزار پاکستانی قید ہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کے امریکہ میں سفیر سے متعلق میڈیا رپورٹس کی تردید کرتے ہیں، داعش کا پاکستان میں کوئی وجود نہیں ہے، پاکستان بھارت سے کشمیر سمیت تمام معاملات پر بات چیت کیلئے تیار ہے۔انہوں نے کہاکہ پاکستان سے دہشت گردی کا مکمل خاتمہ کریں گے، دہشت گردوں کے خلاف آپریشن ضرب عضب کامیابی سے جاری ہے،پاکستان تیونس میں صدارتی گارڈز پر حملے کی مذمت کرتا ہے

مزید : علاقائی