ٹریڈ یونین کے مظاہرے کی کال پر نیشنل بینک کے ریجنل ہیڈ کوارٹر کو تالے ،سٹاف محبوس

ٹریڈ یونین کے مظاہرے کی کال پر نیشنل بینک کے ریجنل ہیڈ کوارٹر کو تالے ،سٹاف ...

لاہور ( کامرس رپورٹر )ٹر یڈ یو نین کے احتجاج اور مظاہرے کی کال پر شاہراہ قائد اعظم پر واقع نیشنل بینک ریجنل ہیڈ کوارٹرکو خوف کے پیش نظر انتظامیہ نے تالے لگا دیئے جس پر نیشنل بنک کے مر د و خواتین افسروں سمیت سینکڑوں سٹاف ممبران محبو س ہو کر رہ گئے جبکہ یو نین اہلکار مقفل بینک کے باہر ریجنل ہیڈ کے خلاف نعرہ بازی کر تے رہے ۔دوسری جانب نیشنل بنک کے اعلی افسر کا کہنا ہے کہ چند شر پسند یو نین اہلکار اپنے مفادات کو عملی جامہ پہنانے کے لیے ہراساں اور جھو ٹا پرا پیگنڈہ کر رہے ہیں ، دھونس کے ذریعے بنک افسران پر پر یشر ڈال رہے ہیں وہ اپنے مذمو م مقاصد میں کامیاب نہیں ہوں گے ۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز بینک ورکنگ ٹائم ختم ہو نے کے بعد بھی نیشنل بینک ریجنل آفس کے سینکڑوں افسران اور عملہ محبوس ہو کر رہ گیا بتایا گیا ہے کہ ٹر یڈ یو نین نے نیشنل بینک کے ریجنل ہیڈ شاہداقبال کی مبینہ کر پشن کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا جس کے پیش نظر نیشنل بینک انتظامیہ نے افسران سمیت عملہ کو باہر جانے سے روکتے ہوئے مین گیٹ سمیت داخلی راستے پر تالہ بندی کر دی ۔تاہم یو نین اہلکار بنک کے اندر داخل نہ ہو نے کے باعث مین گیٹ پر کھڑے نعرہ بازی کر تے رہے ۔ نیشنل بنک پاکستان ٹر یڈ یو نینز فیڈریشن کے صدر اکبر علی خان کا کہنا ہے کہ ریجنل ہیڈ لاہور نے بینک کو نقصان پہنچاتے ہوئے کروڑوں روپے کا فراڈ کیا ہے جس پر یو نین سر اپا احتجا ج ہے اور مطالبہ کر تی ہے کہ ریجنل ہیڈ لاہور کے خلاف قانونی کاروائی کر تے ہوئے عدالتی فیصلہ تک معطل کیا جائے ۔انھوں نے کہا کہ ریجنل ہیڈ نے ہمارے کارکنوں کو یر غمال بنا کر گزشتہ دو گھنٹے سے بنک میں بند کر رکھا ہے جس کی مذمت کر تے ہیں۔روزنامہ پاکستان سے خصو صی گفتگوکر تے ہوئے نیشنل بنک ریجنل آفس لاہو ر کے جنرل مینجر ایچ آر میاں ارشد نے کہاکہ درحقیقت انتظامیہ نے سٹاف کو یرغمال نہیں بنایا بلکہ شر پسند یونین اہلکاروں سے سٹاف اور بنک کو محفو ظ رکھنے کے لیے مین گیٹ پر تالے لگائے گئے ہیں۔انھوں نے بتایا کہ یو نین کے چند کر پٹ اہلکار جن کی ٹرانسفر ہیڈ آفس نے کسی دوسرے ضلع میں کر دی ہے جس کے خلاف یو نین کے اہلکاروں نے بنک افسران کو برا بھلا کہتے ہوئے پر یشر ڈال رہے ہیں کہ ہماری ٹرانسفرز روکی جائے جو ہمارے دائرہ اختیا ر میں نہیں ہے ۔ انھوں نے کہا کہ آج سے قبل بھی یو نین کے شر پسند افراد نے بنک میں داخل ہو نے کے بعد عملہ کو دھمکایا کیا ہے جس کے پیش نظر گزشتہ روز یو نین کے احتجاج کے باعث مین گیٹ کو بند کر دیا گیا تاکہ سٹاف اور عمارت کو ان شر پسند عناصر سے محفو ظ رکھا جا سکے ۔ ایک سوال کے جواب میں انھوں نے کہا کہ یہاں پر تمام سٹاف اپنا آفس ورک کر رہا ہے انھیں زبر دستی نہ تو بٹھایا گیا ہے اور نہ ہی کسی کو یر غمال بنا یا ہے۔

مزید : صفحہ اول