چہلم امام حسینؓ،مرکزی جلوس پرامن انداز میں اختتام پذیر

چہلم امام حسینؓ،مرکزی جلوس پرامن انداز میں اختتام پذیر

کراچی (اسٹاف رپورٹر) کراچی میں حضرت امام حسینؓ اور شہدائے کربلا کا چہلم نہایت عقیدت واحترام اور مذہبی جوش وجذبے کے ساتھ منایا گیا۔ شہر بھر میں مجالس برپا ہوئیں اور مختلف علاقوں سے ماتمی جلوس نکالے گئے۔ مرکزی مجلس نشتر پارک میں منعقد ہوئی۔ مجلس سے ممتاز عالم دین علامہ طالب جوہری نے خطاب کیا۔ بعد ختم مجلس نشتر پارک سے علم ذوالجناح کا مرکزی جلوس برآمد ہوا جو شاہ احمد نورانی چورنگی (سابقہ نمائش چورنگی) سے ہوتے ہوئے امام بارگاہ علی رضا پہنچا جہاں شرکاء نے نماز ظہرین ادا کی۔ مرکزی جلوس اپنے مقررہ راستوں سیون ڈے، ایمپریس مارکیٹ، صدر، ریگل چوک، تبت سینٹر، پلازہ، جوبلی، ریڈیو پاکستان، جامع کلاتھ، سول اسپتال، لائٹ ہاؤس، سٹی کورٹ، جوڑیا بازار، بولٹن مارکیٹ، ڈینسو ہال سے ہوتا ہوا حسینیہ ایرانیان کھارادر پر پہنچ کر اختتام پذیر ہوا۔ جلوس کے راستوں اور نشتر پارک، پرانی نمائش اور اس کے اطراف مختلف تنظیموں کی جانب سے استقبالیہ وطبی کیمپ بھی لگائے گئے تھے۔ مختلف تنظیموں کی جانب سے پانی وشربت کی سبیلیں بھی لگائی گئیں۔ مرکزی جلوس کی فضائی نگرانی بھی کی گئی۔ بم ڈسپوزل اسکواڈ کے عملے نے جلوس کے راستوں کی سوئپنگ کی۔ اس موقع پر سراغ رساں کتوں سے بھی مدد لی گئی۔ اس کے علاوہ شہر کی اہم شاہراؤں ومارکیٹوں کے باہر رینجرز کے چاق وچوبند دستے تعینات کئے گئے تھے۔مختلف فلاحی تنظیموں کی ایمبولینسیں بھی کسی بھی ناخوشگوار واقعے کے پیش نظر جلوس میں شامل رہیں تاہم جلوس پرامن طریقے سے اپنی منزل کو پہنچ گیا۔ چہلم حضرت امام حسینؓ کے جلوس کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے علماء کرام نے کہا کہ شہدائے کربلا کی قربانیوں کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا کیونکہ ان مقدس ہستیوں نے اپنا سب کچھ قربان کرکے دین اسلام کو ہمیشہ کے لئے سربلند کیا۔ مصائب ومشکلات سے نجات کے لئے ان مقدس ہستیوں کی پیروی کی جائے تاکہ ملک امن کا گہوارہ بن جائے۔

مزید : کراچی صفحہ اول