’’صفاپشاور ‘‘ کا باقاعدہ افتتاح ، سینیئروز یرنے جھاڑو مار کر صفائی مہم شروع کر دی

’’صفاپشاور ‘‘ کا باقاعدہ افتتاح ، سینیئروز یرنے جھاڑو مار کر صفائی مہم ...

 پشاور( پاکستان نیوز)سینئر صوبائی وزیر عنایت اللہ خان نے سپلائی گیٹ میں جھاڑو لگا کر ’’ صفا پشاور ‘‘ کے نام سے دس روزہ صفائی مہم کا افتتاح کردیا ۔ اس حوالے سے واٹر اینڈ سینی ٹیشن سروسز پشاور (ڈبلیو ایس ایس پی) کے زیر اہتمام ایک تقریب کا انعقاد کیا گیا جس میں ضلع ناظم پشاور ارباب محمد عاصم خان ‘ نائب ناظم ضلع پشاور سید قاسم علی شاہ ‘ ٹاؤن ون ناظم زاہد ندیم ‘ ٹاؤن ون نائب ناظم شعیب بنگش ڈبلیو ایس ایس پی کے چیف ایگزیکٹیو آفیسر محمد نعیم خانجنرل منیجر آپریشنز نا صر غفور خان،‘ ٹاؤن ون ممبران عزیز صافی ‘ احسان اللہ ‘ فہد شفیع ‘ محمد عثمان ‘ نیبر ہوڈ کے ناظمین اور کونسلروں سمیت علاقہ معززین نے کثیر تعداد میں شرکت کی ۔ سینئر صوبائی وزیر عنایت اللہ خان نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پشاور کی خوبصورتی پر 29 ارب روپے لگا رہے ہیں اس سلسلے پشاور کے مختلف علاقوں میں پارک اور گلیاں بنائی جائیں گی سی اینڈ ڈبلیو ‘ ہیلتھ اور ایجوکیشن پر صوبے کا 31 فیصد خرچہ لگا رہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ پشاور کی صفائی میں یونیسیف سمیت دیگر چالیس غیر سرکاری تنظیمیں اور الخدمت فاؤنڈیشن حصہ لے رہی ہے جس کے بدولت عوام کو بہت جلد صاف پشاور دینگے ۔ انہوں نے کہا کہ پشاور 6 ہزار سال پرانا شہر ہے جس کے تاریخی باغ بحال کردےئے گئے ہیں اور پشاور کی خوبصورتی کو یقینی بنانے کے لئے حیات آباد سے لے کر موٹروے تک پودے لگا دےئے گئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ حالیہ بلدیاتی انتخابات میں کامیاب ہونے والے نو منتخب بلدیاتی نمائندے کام کرنے کی امنگ رکھتے ہیں اور وہ عوام کی توقعات پر پورا اتریں گے جو پشاور کو تبدیل کریں گے ۔ انہوں نے کہا کہ نو منتخب ڈسٹرکٹ ‘ تحصیل ‘ نیبر ہوڈ ناظمین اور کونسلرز اس مہم کو کامیاب بنانے میں اپنا حصہ ڈالے تاکہ مہم کی کامیابی سمیت شہر کے عوام کو صاف پشاور مہیا کیا جا سکے ۔ انہوں نے کہا کہ ڈبلیو ایس ایس پی نے پشاور میں صفائی کا تہیہ کر رکھا ہے اور جس زور وشور سے گندگی کو ٹھکانے کی کارروائیاں جاری ہیں اس میں ان کو کامیابی حاصل ہو گی ۔ انہوں نے کہا کہ دس روزہ مہم کی کامیابی پر اختتامی تقریب میں وزیراعلیٰ پرویز خٹک شرکت کریں گے اور اگر عوام اس دس روزہ مہم سے مطمئن نہ ہوئے تو اس مہم میں دس دن اور بھی توسیع کیا جائیگا ۔ انہوں نے کہا کہ صفائی نصف ایمان ہے جس کو یقینی بنانے سے نصف ایمان پورا ہوجاتا ہے پچاس فیصد کارکردگی حکومت خود یقینی بنائیگی جبکہ پچاس فیصد عوام خود صفائی کو یقینی بنائیں ۔ اس موقع پر چیف ایگزیکٹیو آفیسر محمدنعیم خان نے کہا کہ وہ خود کو عوام کے خادم سمجھتے ہیں جہاں کہیں بھی عوام کو مسائل درپیش ہوں گے عوام کو درپیش مسائل کے حل کے لئے کمپلینٹ سیل بنایا گیا ہے کسی بھی وقت انکو مسائل درپیش ہوں ترجیحی بنیادوں پر حل کئے جائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت نے عوام کے مفاد کی خاطر ڈبلیو ایس ایس پی کا قیام عمل میں لایا جو عوام کو ریلیف فراہم کرنے کے لئے ہر وقت تیار رہتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ ادوار میں مختلف پارٹیوں کے نمائندوں نے عملہ صفائی کو اپنے ذاتی کاموں میں لگائے تھے جبکہ اب عملہ موجود ہے اور ہر علاقے کی صفائی سو فیصد کی جاتی ہے روزانہ کی بنیاد پر 850 ٹن کچرا صاف کیا جاتا ہے پشاور کے ان علاقوں میں پائپ تبدیل کردےئے گئے ہیں جہاں پائپ بوسیدہ اور زنگ آلود تھے ۔ انہوں نے کہا کہ پشاور کے مختلف علاقوں میں فلٹریشن پلانٹ لگائے جائیں گے عوام کو چاہئے کہ وہ صفائی عملہ کیساتھ تعاون کرنے سمیت خود بھی ماحول کو صاف رکھنے میں اپنا کردار ادا کریں ۔

 

مزید : پشاورصفحہ اول