میڈیکل ٹیچنگ انسٹی ٹیوٹ اصلاحاتی ایکٹ 15ء کیخلاف درخواستوں کی سماعت چوتھے روز بھی جاری

میڈیکل ٹیچنگ انسٹی ٹیوٹ اصلاحاتی ایکٹ 15ء کیخلاف درخواستوں کی سماعت چوتھے ...

پشاور(نیوز رپورٹر)پشاورہائی کورٹ کے چیف جسٹس مظہرعالم میانخیل کی سربراہی میں قائم لارجربنچ نے میڈیکل ٹیچنگ انسٹی ٹیوشنزاصلاحاتی ایکٹ 2015ء کے خلاف دائرآئینی درخواستوں کی سماعت چوتھے روز بھی جاری رکھی اوروکلاء کے دلائل کے بعد مزید سماعت ملتوی کردی فاضل بنچ نے گذشتہ روز سماعت شروع کی تو اس موقع پر خیبرپختونخواکے تدریسی ہسپتالوں کی جانب سے ان کے وکیل سید ارشدعلی نے 2002ء کے آرڈیننس اورموجودہ ایم ٹی آئی ریفارمزایکٹ2015ء کاتقابلی جائزہ پیش کرتے ہوئے دلائل دیتے ہوئے عدالت کو بتایا کہ درخواست گذاروں نے یہ تاثردینے کی کوشش کی ہے کہ موجودہ قانون کے آنے سے ان اداروں کی خودمختاری ختم کردی گئی ہے اوران میں سرکار کاتسلط قائم کردیاجائے جبکہ حقیقت اس کے بالکل برعکس ہے۔

مزید : پشاورصفحہ اول