کراچی بلدیاتی انتخابات ،کسی جماعت کو اکثریت حاصل نہ ہونے کا امکان

کراچی بلدیاتی انتخابات ،کسی جماعت کو اکثریت حاصل نہ ہونے کا امکان

کراچی(اسٹاف رپورٹر)کراچی میں تیسرے مرحلے کے 5دسمبر کو ہونے والے بلدیاتی انتخابات میں کسی جماعت کو واضح اکثریت حاصل ہونے کے امکانات نہیں ہیں، برتری حاصل کرنے والی جماعت کو جوڑ توڑ کے ذریعے اپنا میئر لانا پڑے گا۔تاہم ایم کیوایم کو دیگرجماعتوں پرواضح برتری حاصل ہے ذرائع کے مطابق کراچی کے 6 اضلاع میں سے 4 اضلاع سینٹرل، کورنگی ، شرقی اور غربی ایم کیوایم کے اکثریتی علاقے سمجھے جاتے ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ایم کیو ایم کو سخت مقابلے کا سامنا کرنا پڑے گااور تحریک انصاف کو ایم کیو ایم کے زیر اثر علاقوں میں خاموش ووٹ مل سکتا ہے۔ ایم کیو ایم کو اپنا میئر لانے کے لیے پیپلز پارٹی، جے یو آئی (ف) اور مسلم لیگ (ن) سے اتحاد کرنا پڑے گا۔ ایم کیو ایم نے 20 سے زیادہ یوسیز میں اپنے امیدوار کھڑے ہی نہیں کیے پہلی مرتبہ ایم کیو ایم نے لیاری میں اپنے امیدوار کھڑے نہیں کیے۔ ایم کیو ایم کے زرائع کا کہنا ہے کہ ایم کیو ایم مشکل حالات سے گزر رہی ہے ۔ گرفتاریوں اور چھاپوں کے باعث 209 یوسیز میں سے 180امیدوار کھڑے کیے گئے ہیں۔

مزید : کراچی صفحہ آخر