ترک طالبہ سے زیادتی ،قتل کیس ،بیٹے ،باپ سمیت تین دوستوں کو عمر قید سزا سنا دی گئی

ترک طالبہ سے زیادتی ،قتل کیس ،بیٹے ،باپ سمیت تین دوستوں کو عمر قید سزا سنا دی ...
ترک طالبہ سے زیادتی ،قتل کیس ،بیٹے ،باپ سمیت تین دوستوں کو عمر قید سزا سنا دی گئی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

استنبول (مانیٹرنگ ڈیسک )دوست اسلامی ملک میں طالبہ سے جنسی زیادتی ،قتل اور لاش نذر آتش کیس میں باپ بیٹے سمیت ملزمان کی قسمت کا فیصلہ آ گیا ۔ ترک عدالت نے 20برس کی طالبہ کو جنسی زیادتی اور قتل کا جرم ثابت ہونے پر تین ملزمان کو تاحیات قید کی سزا سنا دی ہے ۔ نوجوان کو زیادتی اور قتل جب کہ اس کے والد اور دوست کو لاش جلانے اور مردہ جسم چھپانے میں مدد کرنے پر سزا سنائی گئی ہے ۔ فرد جرم کے مطابق اوزگی کان اسلان کو فروری میں اس وقت نشانہ بنایا گیا جب وہ شاپنگ ٹرپ سے ایک منی بس کے ذریعے واپس آ رہی تھی کہ ڈرائیور صوفی آلٹنڈوکن نے نوجوان طالبہ کو جنگل میں لے گیا اور زیادتی کی کوشش کے دوران لڑکی نے مزاحمت کی تو اسے بدترین تشددکا نشانہ بنانے کے بعد قتل کر دیا جبکہ اس کے والد اور دوست نے لاش کو نذر آتش کرنے اور اسے ٹھکانے لگانے میں مدد فراہم کی ۔جرم ثابت ہونے پر تینوں کو تا حیات قیدکی سزا دی گئی ہے ۔

واضح رہے کہ طالبہ سے زیادتی ، قتل اور لاش نذر آتش کرنے کے واقعے پر ترکی بھر میں غم و غصہ کی لہر دوڑ گئی تھی اور گلی گلی احتجاج شروع ہو گیا ۔ پولیس نے پہلے ہی ان تینوں کو گرفتار کر رکھا ہے ۔

مزید : بین الاقوامی