عرب ملک میں غیر ملکی مزدوروں کو سب سے بڑی خوشخبری مل گئی، معاہدہ ہوگیا

عرب ملک میں غیر ملکی مزدوروں کو سب سے بڑی خوشخبری مل گئی، معاہدہ ہوگیا
عرب ملک میں غیر ملکی مزدوروں کو سب سے بڑی خوشخبری مل گئی، معاہدہ ہوگیا

  

دوحہ (مانیٹرنگ ڈیسک) حکومت قطر نے لاکھوں غیر ملکی محنت کشوں کی زندگی آسان کرنے کے لئے سات خصوصی شہر بسانے کا فیصلہ کرلیا ہے جن میں ایک اندازے کے مطابق 1لاکھ 80 ہزار غیر ملکی محنت کشوں کو قیام کی سہولت فراہم کی جائے گی۔ لبنانی جریدے دی ڈیلی سٹار کا کہنا ہے کہ قطری دارالحکومت میں منعقد ہونے والی ایک خصوصی تقریب میں حکام نے بتایا کہ یہ ساتوں شہر تقریباً 2 سال کے عرصے میں تعمیر کرلئے جائیں گے۔ اس موقع پر سنٹرل پلاننگ آفس کے ڈائریکٹر جمال شریدہ الکعبی کا کہنا تھا کہ پورا پراجیکٹ 2017ءکے آخر تک مکمل ہوجائے گا۔ واضح رہے کہ غیر ملکی ملازمین کے لئے بنائے جانے والے یہ خصوصی شہر اس سے پہلے دارالحکومت کے نواح میں تعمیر کئے گئے لیبر سٹی کے علاوہ ہیں، جس میں تقریباً 70 ہزار افراد کے قیام کی گنجائش ہے۔

مزید جانئے: سعودی عرب میں مزید 80مردوں نے اپنی بیگمات کو بھی ایڈز کا مریض بنادیا

قطری میڈیا کے مطابق غیر ملکی محنت کشوں کے لئے پہلا شہر دارالحکومت کے شمال میں ام سلال کے نام سے بسایا جائے گا جس میں 24 ہزار افراد کے قیام کی گنجائش ہوگی۔ یہ شہر پورے ملک میں تعمیر کئے جائیں گے اور ان میں رہائشی سہولتوں کے علاوہ کیفیٹیریا ، ٹیلی ویژن روم، جم، مساجد اور مذہبی مراکز کی سہولیات بھی فراہم کی جائیں گی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق قطری حکومت نے ناصرف ان شہروں کی تعمیر کے لئے معاہدوں پر دستخط کردئیے ہیں بلکہ 440 ملین ڈالر (تقریباً 44 ارب پاکستانی روپے) کی رقم بھی مختص کردی گئی ہے۔

مزید : بین الاقوامی