خاتون کے ساتھ سب سے بڑا دھوکہ ہوگیا، جس آدمی کو شوہر سمجھ کر ساتھ رہی وہ دراصل لڑکی نکلا

خاتون کے ساتھ سب سے بڑا دھوکہ ہوگیا، جس آدمی کو شوہر سمجھ کر ساتھ رہی وہ دراصل ...
خاتون کے ساتھ سب سے بڑا دھوکہ ہوگیا، جس آدمی کو شوہر سمجھ کر ساتھ رہی وہ دراصل لڑکی نکلا

  

جکارتہ (نیوز ڈیسک) رشتہ طے کرتے وقت لڑکے کی تعلیم یا کمائی وغیرہ کے متعلق جھوٹ بول کر لڑکی والوں کو دھوکہ دینے کا معاملہ تو اکثر سامنے آتا رہتا ہے لیکن آپ نے کبھی یہ نہیں سنا ہوگا کہ لڑکے کی جنس کے متعلق ہی جھوٹ بول دیا گیا ہو۔ انڈونیشیا میں یہ ناقابل یقین واقعہ حقیقتاً پیش آچکا ہے اور 20 سالہ دلہن بارسالینا کی دکھ بھری کہانی زبان زدعام ہوچکی ہے جسے شادی کے کچھ عرصہ بعد معلوم ہوا کہ اس کا خاوند بھی اسی کی طرح کی ایک لڑکی ہے، جو انتہائی دھوکہ بازی سے اس کے ساتھ مرد بن کر پیش آرہی تھی۔

چند ماہ قبل سامنے آنے والے حقائق کے مطابق بارسالینا کو پہلی دفعہ اس وقت شک گزرا جب اسے اپنے خاوند کی الماری میں خون آلود زیر جامہ ملا۔ اس نے مزید تحقیق کی تو کچھ ایسے مصنوعی جنسی اعضا بھی برآمد ہوئے جن کی کسی مرد کو ضرورت نہیں ہونی چاہیے۔ جب 23 سالہ ’خاوند‘ ایکال ساسر گھر واپس آیا تو شرمیلی بیوی بارسالینا نے پہلی دفعہ اس کی باز پرس شروع کی۔ یہ باز پرس پہلے تکرار اور پھر جھگڑے میں بدل گئی جس کے دوران انکشاف ہوا کہ ایکال دراصل مرد نہیں بلکہ ایک لڑکی تھااور اس نے مصنوعی اعضاءاور اپنی فنکارانہ صلاحیتوں کے ساتھ بارسالینا کو مرد ہونے کا دھوکا دے رکھا تھا۔

مزید جانئے: وہ وقت بچوں کو پڑھانے والی استانی خفیہ طور پر شرمناک نوکری کرتی رہی، پول کھلا تو والدین کی نیندیں اڑ گئیں

حقیقت کھلنے پر بارسالینا کے گھر والوں نے پولیس کو اطلاع کردی مگر گرفتاری سے قبل ہی مصنوعی مرد گھر سے فرار ہو گئی۔ پولیس نے بارسالینا کی شکایت پر شیطان صفت لڑکی کے خلاف شناخت چھپانے اور جعلسازی کے الزامات کے تحت مقدمہ درج کر کے اس کی تلاش شروع کر دی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس