مہنگائی نے عام آدمی کے گرد شکنجہ کس لیا

مہنگائی نے عام آدمی کے گرد شکنجہ کس لیا

لاہور(کامرس رپورٹر) چینی کی مٹھاس مہنگائی کی کڑواہٹ میں تبدیل جبکہ انڈے بھی گرانفروشی کی آگ پر اْبلنے لگے، آلو سمیت سبزیوں اور دالوں کی قیمتوں کو بھی پَر لگ گئے، حکومت نے مہنگائی میں اضافے کا اعتراف کرلیا۔ادارہ شماریات کے مطابق ایک ماہ میں انڈے 23فیصد آلو21فیصد بیسن 8فیصد دال چنا سارھے 7فیصد مہنگی ہوگئی۔مرچیں بھی عوام کے کانوں سے دھواں نکالنے لگیں۔عوام کا کہنا ہے کہ غریب بندہ کیا کرے مہنگی چیزتو وہ نہیں لے سکتا، جو چیز بھی لو وہ مہنگی ہوگئی ہے، آلوبھی مہنگاسبزیاں ٹینڈے پالک ساگ مٹر بہت زیادہ چیزیں مہنگی ہیں۔گیس سلینڈرمیں 7.35 فیصد مہنگائی بھر گئی ، انٹرنیٹ کی سپیڈ تو وہی رہی لیکن چارجز 6فیصد بڑھ گئے، ایک سال میں چینی کی قیمت میں 22فیصد سے زائد اضافے نے میٹھے میں زہرگھول دیا۔عوامی حلقوں کا کہنا ہے کہ وزیراعظم کو آلو سمیت روزمرہ استمعال کی اشیاء4 کی قیمتوں کا علم ہی نہیں وہ عوام کا درد کیسے محسوس کر سکتے ہیں۔سال بھر میں لہسن 55.45 فیصد جبکہ چنا 51 فیصد مہنگا ہوگیا۔ دال ماش 40 فیصد، کالے چنے اور بیسن 36 فیصد مہنگے ہو ئے تاہم حکومت اسی بات پرمطمئن ہے کہ باقی سب اپنی جگہ لیکن پیاز ٹماٹر اور لیموں کی قیمت تو کم ہوگئی ہے۔

مزید : کامرس