پاکستان میں 15 فیصد افراد معذوری کا شکار ہیں ،مقررین

پاکستان میں 15 فیصد افراد معذوری کا شکار ہیں ،مقررین

بونیر(ڈسٹرکٹ رپورٹر)عالم یوم معذوری کے دن کے خوالہ سے ایک بہت بڑی تقریب بونیر سپیشل فرسن ڈیولپمنٹ ارگنائیزیشن کے زیر اہتمام عبدالو لی خان یو نیورسٹی میں منعقد ہو ئی جس میں ضلع بھر کے معذور افراد کے علاوہ محکمہ سوشل ویلفئیر کے ڈسٹرکٹ افیسر بھادر شاہ ،ضلع کونسل بونیر میں اپوزیشن لیڈر حاجی صدیق اللہ ،الخدمت فاونڈٰشن بونیر کے صدر زر فروش خان ،ڈسٹرکٹ کونسل کے ممبران حاجی سردارعلی خان ،حجاب اللہ ،تحصیل کونسل ڈگر کے ممبر شیرین خان ،اواز ڈسٹرکٹ فورم کے صدر بحت بھادر خان ،جنرل سیکرٹر شاہد خان کے علاوہ دیگر عمائیدین علاقہ اور پشاور یو نیورسٹی کے گولڈ مڈلسٹ معذدور اقبال نے خصوصی شرکت کی ،مقررین نے اس اہم دن کے خوالہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں پندرہ فیصد افراد معذوری کے شکار ہے مگر انکے لئے ماہانہ تیس روپے مختص کئے گئے ہیں جو انکے ساتھ مذاق ہے انہوں نے کہا معاشرہ میں معذور افراد کو غلط ناموں سے پکارا جاتاہے ،سرکاری نوکریوں میں انکا کھوٹی دو فیصد ہے انہوں نے کہا کہ معذوری کو ئی گناہ نہیں ہے اگر حکومت ان افراد پر معمولی توجہ دے تو وہ معاشرہ کے اہم افراد بن سکتے ہے ،اس موقع پر الخدمت فاونڈیشن کے صدر نے کہا کہ الخدمت فاونڈیشن نے ابتک بونیر کے معذور افراد میں پانچ لاکھ ستر ہزار روپے کے وئیل چئیر تقسیم کئے ہے ،معذور افراد نے عالمی یو م معذور کے موقع پر ایک واک کیا اور اپنے مطالبات کے حق میں پلے کارڈز اور بینرز اٹھارکھے تھے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر