روس نے بھارت اور افغانستان کی جانب سے پاکستان مخالف بیانات کی حمایت کر نے سے لاتعلقی کا اظہار کردیا

روس نے بھارت اور افغانستان کی جانب سے پاکستان مخالف بیانات کی حمایت کر نے سے ...
روس نے بھارت اور افغانستان کی جانب سے پاکستان مخالف بیانات کی حمایت کر نے سے لاتعلقی کا اظہار کردیا

  


امرتسر (مانیٹرنگ ڈیسک )ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں روس نے بھارت اور افغانستان کی جانب سے پاکستان مخالف بیانات کی حمایت سے لا تعلقی کا اظہار کردیا ،کابل کے لیے روس کے نمائندے ضمیر کابلوف نے پاکستان کی دو ٹوک حمایت کردی ۔

افغان صدر نے بھارت میں پاکستان کے خلاف پھر زہر اگل دیا ، ہارٹ آف ایشیا کانفرنس سے خطاب میں پاکستان پر طالبانوں کوپناہ دینے کا الزام لگا دیا

تفصیل کے مطابق ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں خطاب کے دوران افغان صدر نے پاکستان پر طالبانوں کی مدد کرنے کا الزام لگا یا جبکہ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی نے پاکستان کا نام لیے بغیر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ افغانستان میں دہشت گردی پر خاموشی دہشت گردوں اور ان کے آقاﺅں کو مضبوط کرے گی ،دہشت گردی میں تعاون کرنے والوں کے خلاف لازمی کارروائی کی ضرورت ہے ۔ان بیانات کے بعد بھارتی میڈ یا سے گفتگو کرتے ہوئے کابل کے لیے روس کے نمائندے ضمیر کابلوف نے کہا کہ ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں پاکستان پر تنقید کرنا غلط تھا ،الزامات کا کھیل نہیں ہونا چاہیے ۔انہوں نے کہا کہ ہم یہاں دوست اور حمایتی ہیں ،خطے میں ہر ایک سے بہتر تعلقات کے لیے کام کر رہے ہیں ۔روسی نمائندے نے کہا کہ کانفرنس میں خطاب کے دور ان سرتاج عزیز کی تقریر بہت تعمیری اور دوستانہ تھی ،ہارٹ آف ایشیا کا مجموعی محور افغانستان اور خطہ ہے ۔انہوں نے مزید کہا کہ ہارٹ آف ایشیا کانفرنس کا ایجنڈا ہائی جیک نہیں ہوا۔

مزید : بین الاقوامی