جاویدخانی بجلی کا جھٹکا لگنے کے باعث عمارت سے گر گئے ،ابتدائی طبی امداد میں ناک اور کان سے خون آ رہا تھا :خاندان کا ہسپتال میں موقف

جاویدخانی بجلی کا جھٹکا لگنے کے باعث عمارت سے گر گئے ،ابتدائی طبی امداد میں ...
جاویدخانی بجلی کا جھٹکا لگنے کے باعث عمارت سے گر گئے ،ابتدائی طبی امداد میں ناک اور کان سے خون آ رہا تھا :خاندان کا ہسپتال میں موقف

  

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک)معروف کرنسی ڈیلر جاوید خانانی کے اہل خانہ نے کہاہے کہ انہیں بجلی کا جھٹکا لگا جس کے باعث وہ عمارت سے گر گئے,ہسپتال ذرائع کا کہناہے کہ موت کی تصدیق ہوتے ہیں اہل خانہ لاش کو لے کر چلے گئے ۔

نجی ٹی وی چینل جیونیوز نے ہسپتال ذرائع کے حوالے سے کہاہے کہ جاوید خانانی کو جب ہسپتال لایا گیا تو ان کی موت ہو چکی تھی اورموت کی تصدیق ہوتے ہیں ان کے خاندان والے تقریباً پانچ منٹ کے بعد پوسٹ مارٹم کیے بغیر لاش کو لے گئے،ہسپتال میں خاندان والوں نے موقف اختیار کیا ہے کہ عمار ت پر ان کو کرنٹ لگا جس کے باعث وہ نیچے گر گئے اور ابتدائی طبی امداد کے دوران ان کے ناک اور کان سے خون بہہ رہا تھا ۔پولیس کا کہناہے کہ وہ اہل خانہ سے درخواست کرے گی کہ پوسٹ مارٹم کروایا جائے لیکن اس کا حتمی فیصلہ خاندان والو ںنے ہی کرنا ہے ۔واضح ہے کہ جاوید خانانی پر ایف آئی میں منی لانڈرنگ کیس کی تحقیقات چل رہی تھیں ۔

مزید : کراچی