ہارٹ آف ایشیا کانفرنس کا مشترکہ اعلامیہ جاری،کانفرنس کا افغان مہاجرین کی 30سال سے میزبانی پر پاکستان اور ایران کو خراج تحسین

ہارٹ آف ایشیا کانفرنس کا مشترکہ اعلامیہ جاری،کانفرنس کا افغان مہاجرین کی ...
ہارٹ آف ایشیا کانفرنس کا مشترکہ اعلامیہ جاری،کانفرنس کا افغان مہاجرین کی 30سال سے میزبانی پر پاکستان اور ایران کو خراج تحسین

  


امرتسر(مانیٹرنگ ڈیسک)بھارت کے شہر امرتسر میں ہونے والی ہارٹ آف ایشیاکانفرنس کا مشترکہ اعلامیہ جاری کر دیا گیاہے جس میں کہا گیاہے کہ افغان مہاجرین کی 30سال سے میزبانی پر پاکستان اور ایران کوخراج تحسین پیش کیا گیا  ،کانفرنس میں دیگر ممالک کے اندرونی معاملات میں مداخلت نہ کرنے کے عزم کا اظہار کیا گیاہے ۔

تفصیلات کے مطابق مشترکہ اعلامیے کے مطابق کانفرنس افغانستان میں امن اورخوشحالی کیلئے اہم علاقائی پلیٹ فارم ہے،ہارٹ آف ایشیا کانفرنس کا مقصدخطے میں امن اوراستحکام تھا۔مشترکہ اعلامیے میں کہا گیاہے کہ کسی ملک کی علاقائی سالمیت کیخلاف طاقت کے استعمال یادھمکی سے گریز کرنے اور اختلافات پرامن طورپرحل کرنے کے عزم کا اظہار کیا گیاہے۔

اعلامیے میں کہا گیاہے کہ مشترکہ چیلنج سے نمٹنے،سیکیورٹی استحکام کے فروغ کیلئے علاقائی تعاون اہم ذریعہ ہے،رکن ممالک میں پرخلوص اورموثر تعاون کے فروغ کیلئے اور دہشتگردی سے نمٹنے کیلئے رکن ممالک تعاون کوفروغ دینے کے عزم کا بھی اظہار کیا گیاہے۔

اعلامیے کے مطابق افغان مہاجرین کی 30 سال سے میزبانی پرپاکستان اورایران قابل تحسین ہیں،افغانستان میں محفوظ آبادکاری تک میزبان ممالک پناہ گزینوں کواپنے ممالک میں رکھیں۔یہ بھی کہا گیا ہے کہ تمام ممالک افغانستان میں سیکیورٹی کی صورتحال پر تشویش ہے اور علاقے میں دہشتگردی مختلف گروہوں بشمول حقانی نیٹ ورک، القاعدہ، اسلامک موومنٹ آف ازبکستان، ایسٹ ترکستان اسلامک موومنٹ، لشکر طیبہ، جیش محمد، تحریک طالبان پاکستان، جماعت الاحراراور جند اللہ جیسے گروہوں کی وجہ سے جاری ہے۔

کانفرنس نے اس بات پر خوشی کا اظہار کیا کہ افغان حکومت اور گلبدین حکمت یار کی حزب اسلامی کے درمیان کامیاب مذاکرات ہوئے ہیں اور اس کی وجہ سے خطے میں امن آئے گا۔

مزید : بین الاقوامی /اہم خبریں