بھارت کا ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں شرکت کیلئے گئے پاکستانی صحافیوں کے ساتھ ایسا شرمناک ترین سلوک کہ پوری دنیا میں مودی کی ناک کٹ گئی

بھارت کا ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں شرکت کیلئے گئے پاکستانی صحافیوں کے ساتھ ...
بھارت کا ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں شرکت کیلئے گئے پاکستانی صحافیوں کے ساتھ ایسا شرمناک ترین سلوک کہ پوری دنیا میں مودی کی ناک کٹ گئی

  

امرتسر (مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت کے شہر امرتسر میں جاری ہارٹ آف ایشیا کانفرنس ختم ہوگئی ہے لیکن بھارت کی مہمان نوازی اور سفارتی آداب کی قلعی پوری دنیا کے سامنے کھل کر آگئی ہے ۔

نجی ٹی وی جیو نیوز کے مطابق ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں شرکت کیلئے پاکستان سے صحافیوں کا 9 رکنی وفد انڈیا گیا تھا ۔ انڈیا جانے والے صحافیوں کو وہاں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ۔ انہیں بھارت کی حدود میں داخل ہوتے ہی ہر پولیس ناکے پر روکا گیا اور ان کی دستاویزات کی مکمل طور پر جانچ پڑتال کی گئی جبکہ دیگر ملکوں کے صحافیوں کو کسی قسم کے مسائل کا سامنا نہیں کرنا پڑا۔

ہارٹ آف ایشیاءمیں گئے ہوئے سرتاج عزیز کو بھارت نے ’قید‘ کردیا

ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں شرکت کے موقع پر بھی پاکستانی صحافیوں کو باہر ہی روک لیا گیا اور شناخت ہونے کے باوجود انہیں اندر نہیں جانے دیا گیا جس کے بعد پاکستانی ہائی کمشن کا عملہ وہاں آیا اور بھارتی سکیورٹی حکام کی منت سماجت کرکے صحافیوں کو اندر لے کر گیا۔

بھارتیوں کی پاکستانی ہائی کمشنرکو پریس کانفرنس سے روکنے کی کوشش، عبدالباسط نے ایسا کام کردیا کہ آپ بھی کہیں گے ’ہر ملک میں پاکستان کا ایسا ہی سفیر ہونا چاہیے‘

واضح رہے کہ انڈیا نے مشیر خارجہ سرتاج عزیز کو گولڈن ٹیمپل کا دورہ کرنے بھی نہیں دیا جبکہ انہیں پاکستانی صحافیوں سے ملاقات کی اجازت بھی نہیں دی گئی اور انہیں ان کے ہوٹل کے کمرے تک محدود کردیا گیا ۔ دوسری جانب ہارٹ آف ایشیا کانفرنس کے سکیورٹی انچارج نے پاکستانی ہائی کمشنر عبدالباسط کو بھی میڈیا سے گفتگو کرنے کی اجازت نہیں دی تاہم انہوں نے سکیورٹی انچارج کو کھری کھری سنادیں اور ڈنکے کی چوٹ پر میڈیا سے نہ صرف بات کی بلکہ مسئلہ کشمیر پر بھی کھل کر بولے۔

مزید : قومی