ہمارے خلاف نازیبا الفاظ کس نے لکھے؟ بھارتی سکول کی88طالبات کو اساتذہ نے برہنہ کردیا

ہمارے خلاف نازیبا الفاظ کس نے لکھے؟ بھارتی سکول کی88طالبات کو اساتذہ نے برہنہ ...
ہمارے خلاف نازیبا الفاظ کس نے لکھے؟ بھارتی سکول کی88طالبات کو اساتذہ نے برہنہ کردیا

  

نئی دہلی (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارتی ریاست ارنچل پردیش کے ایک ہائی سکول میں مبینہ طور پر اساتذہ کے خلاف نازیبا الفاظ لکھنے پر صدر معلمہ اور دیگر اساتذہ نے88طالبات کو برہنہ کرکے دیگر طالبات کے سامنے کھڑا کردیا ۔

نواز شریف دسمبر کے پہلے ہفتے میں لندن جائیں گے

بھارتی اخبار ہندوستان ٹائمز کے مطابق بھارتی ریاست ارنچل پردیش میں ایک ہائی سکول کی 88طالبات کو تین اساتذہ نے دیگر طلبہ کے سامنے کپڑے اتروا کر کھڑا کردیا ، اساتذہ نے الزام لگایا کہ طالبات نے ان کے خلاف نازیبا الفاظ تحریرکئے تھے ، پولیس کے مطابق ضلع پاپمپور میں 23نومبر کو کستوبرا گاندھی ہائی سکول میں یہ واقعہ پیش آیا ، یہ خبر اس وقت سامنے آئی جب چھٹی اور ساتویں جماعت کی طالبات نے ایک طلبہ تنظیم سے رابطہ کیا اور انہیں اپنے ساتھ پیش آنے والے غیر انسانی رویے کے بارے میں بتایا، بعدازاں تھانے میں ایف آئی درج کردی ہے جبکہ پاپم پورہ پولیس نے اس واقعہ کی تحقیق کی ہے، ایف آئی آر کے مطابق سکول کی دو اساتذہ اور ایک جونیئر معلمہ نے ان کے کپڑے اتروائے ، پولیس حکام کے مطابق اس کیس کو خواتین پولیس کے سپرد کردیا گیا ہے ، پولیس اب طالبات ، ان کے اساتذہ اور والدین سے بھی واقعے کی تحقیقات کررہی ہے۔گذشتہ روز مقامی پولیس کی ایک تحقیقاتی ٹیم نے طالبات اور ان کے والدین سے واقعے کی تحقیقات کی ہیں ، دوسری جانب مقامی افراد نے اس واقعے کو انسانی قدروں کے خلاف قرار دیتے ہوئے واقعے کی تحقیقات اور ملوث افراد کو سخت ترین سزا دینے کا مطالبہ کیا ہے۔

ڈیلی پاکستان کا یو ٹیوب چینل سبکرائب کرنے کے لیے یہاں کلک کریں

مزید : بین الاقوامی