کیلے کا زیرکاشت رقبہ 34830 ہیکٹرز‘ پیداوار 154825 ٹن سے متجاوز

کیلے کا زیرکاشت رقبہ 34830 ہیکٹرز‘ پیداوار 154825 ٹن سے متجاوز

لاہور(اے پی پی )ماہرین نے کہا ہے کہ پاکستان میں کیلے کا زیرکاشت رقبہ 34830 ہیکٹرز اور پیداوار 154825 ٹن سے بھی تجاوز کر گئی ہے۔ سندھ میں کیلے کی پیداوار 127426 اور پنجاب میں 9373تک پہنچ گئی ہے نیزموسہ کیوینڈیسی، بصرائی ،چمپا،گروس بائیکل، موسیٰ سیپی اینٹم،ہیلٹا نامی وغیرہ اقسام کاشت کرکے کیلے کی شاندار پیداوارحاصل کی جاسکتی ہے۔ انھوں نے بتایاکہ کیلے کی اعلیٰ اقسام ایسے گرم مرطوب علاقوں میں انتہائی کامیابی کے ساتھ کاشت کی جاسکتی ہیں جہاں کہر نہ پڑتا ہو اور پودے گرم لو سے بھی محفوظ رہتے ہوں۔ جن علاقوں میں سالانہ ایک ہزار ملی لیٹر تک بارش ہو تی ہو ، موسم سرمامیں درجہ حرارت 16 سے 18 ڈگری اور موسم گرما میں 21 سے24ڈگری سینٹی گریڈ تک رہتاہو وہاں کیلے کی شاندار پیداوار ہو سکتی ہے ۔ چونکہ کیلے کے پودے کی جڑیں کم گہرائی تک جاتی ہیں اس لئے اسے کافی پانی اور زرخیز ایسی زمین درکارہوتی ہے ۔

جس میں پانی اچھی طرح جذب کرنے کی صلاحیت ہو ۔ ما ہر ین کے مطا بق کیلے کی افزائش رائزوم کے ٹکڑوں اور زیر بچوں سے کی جاسکتی ہے ۔

مزید : کامرس