کراچی میں آدھے سے زیادہ فیملی ہے آنا جانا لگا رہتا ہے،مایا سونو خان

کراچی میں آدھے سے زیادہ فیملی ہے آنا جانا لگا رہتا ہے،مایا سونو خان
 کراچی میں آدھے سے زیادہ فیملی ہے آنا جانا لگا رہتا ہے،مایا سونو خان

  

لاہور(فلم رپورٹر) معروف اداکارہ و ماڈل مایا سونو خان نے کہا ہے کہ کراچی میں میری آدھے سے زیادہ فیملی رہتی ہے اس لئے یہاں آنا جانا لگا رہتا ہے میری والدہ اور بہن کی طبیعت کی خرابی کے باعث مجھے ایمرجنسی میں لاہور سے کراچی آنا پڑا میری غیر کوجودگی میں لوگ بے تکی باتوں میں مصروف ہیں جس کی مجھے ذرہ برابر بھی پرواہ نہیں ہے۔بہت سارے فنکار اپنے شہروں کو چھوڑ کردوسرے شہر میں جا کر کام کررہے ہیں اس کا یہ ہرگز مطلب نہیں کہ انہوں نے اپنا شہر اور اپنوں کو بھی چھوڑ دیا ہے۔ لاہور میرا پسندیدہ شہر ہے اس کو چھوڑنے کا تصور بھی نہیں کرسکتی ۔مایا سونو خان نے کہا کہ اچھی اورمعیاری فلموں کوجب تک لوگ دیکھنے کے لئے سینما گھروں کا رخ نہیں کرتے‘ پاکستانی فلم اور سینما انڈسٹری کوانٹرنیشنل مارکیٹ تک پہنچانے کیلئے خواب دیکھنا بے معنی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستانی فلموں کی سپورٹ کیلئے عوام کوسینماگھروں کا رخ کرنا چاہیے کیونکہ جب تک شائقین ایسا نہیں کر یں گے فنکاروں کی محنت اور سر مایہ کاری کا کوئی فائدہ نہیں موجودہ حالات میں پاکستانی فلم انڈسٹری کے معیار کوانٹر نیشنل سطح تک پہنچا مشکل نظر آرہا ہے ۔مایا سونو خان نے کہا کہ میں نے ہمیشہ معیار کو تر جیحی دی ہے جس کی وجہ سے مجھے اور میرے کام کو پسند کیا جا تا ہے ۔

مزید : کلچر