یہ موسمی کام ہے ،دکانیں کرایہ پر نہیں لے سکتے ، ریڑھی بانوں کا موقف

یہ موسمی کام ہے ،دکانیں کرایہ پر نہیں لے سکتے ، ریڑھی بانوں کا موقف

لاہور(کلچرل رپورٹر)ڈرائی فروٹ ریڑھی پر فروخت کرنے پر مجبور ہیں ہم نے بھی اپنے بچوں کا پیٹ پالنا ہے اتنی مہنگائی میں دکان کہاں سے کرایہ پر حاصل کریں ان خیالات کا اظہار ریڑھی فروش محمد اسلم اورخاور نے روز نامہ پاکستان سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ ہم غریب لوگ بڑی مشکل سے اپنا اور بچوں کا پیٹ پالتے ہیں اور سڑکوں پر کھڑے ہوکر فروخت کرنے پر مجبور ہیں بلکہ ہمیں تو پولیس والے بلاوجہ تنگ کرتے ہیں اور ہم سے پیسہ وصول کرتے ہیں ہم کس کو شکایت کریں کیونکہ یہاں پر کوئی حکومت ہی نہیں جو غریب لوگوں کی مدد کرے انہوں نے کہا کہ ہم بھی چاہتے ہیں کہ ہمارے پاس بھی دکان ہو اور ہم بھی بیٹھ کر آرام سے کام کریں مگر چیزوں کی قیمتیں ہی اتنی ہیں کہہمارے سارے اخراجات ہی پورے نہیں ہوتے اس حوالے سے حکومت کی جو ذمہ داری ہے اس میں وہ مکمل طور پر ناکام ہوچکی ہے انہوں نے کہا کہ ہر ایک رشوت لیکر خاموش ہوجاتا ہے وارڈن ہمیں تنگ کرتے ہیں مگر پیسے لیکر وہ بھی خاموش ہوجاتے ہیں ملک میں کوئی قانون نہیں ہے جس کے پاس پیسے ہیں وہ ہی اس وقت حقیقی طور پر مزے کی زندگی گزار رہا ہے۔

B

مزید : میٹروپولیٹن 1