دہشتگردوں کیخلاف فتوے کے بدلے میں مدارس کیخلاف اقدامات کریں، مفتی کفایت اللہ

دہشتگردوں کیخلاف فتوے کے بدلے میں مدارس کیخلاف اقدامات کریں، مفتی کفایت اللہ

ملتان (سٹی رپورٹر)دہشت گردی کے خلاف جنگ میں علماء دیوبند نے جنوبی، دہشت گردوں کے خلاف مدارس نے فتوی جاری کیا، پاک فوج کی حمایت کا اعلان کیا، بدلہ میں فورتھ شیڈول اور مدارس کے خلاف اقدامات ملے۔ ان خیالات(بقیہ نمبر31صفحہ7پر )

کااظہار جمعیت علماء اسلام کے مرکزی راہنما مفتی کفایت اللہ نے جامعہ فاروقیہ شجاع آباد کے زیر انتظام سٹی چوک شجاع آباد پر تذکرہ خیرالوری کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ علماء کرام نے پاکستان کے لیے ہمیشہ قربانیاں دی ہیں، پاکستان کی طرف اٹھنے والی ہر آنکھ پھوڑ دی جائے گی۔ انہوں نے کہاکہ ختم نبوت کے قانون پرشب خون مارا گیا ،جس کو ناکام بنا دیا گیا۔ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے مرکزی راہنما مولانا اللہ وسایا نے کہا کہ ختم نبوت کے قانون کی بحالی عوامی قوت ،پارلیمنٹ میں علماء کرام کی محنت اور ہائی کورٹ اسلام آباد میں مجلس تحفظ ختم نبوت کی کاوشوں سے ممکن ہوئی، انہوں نے کہا کہ جانتے ہیں کون کون سازش میں شریک تھا، انہوں نے کہا کہ مغربی قوتوں کوخوش کرنے کے لیے ختم نبوت کا قانون بدلا گیا ، انہوں نے کہا کہ ختم نبوت کے کازکو بدنام نہیں ہونے دیا جائے گا۔کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وفاق المدارس العربیہ پاکستان جنوبی پنجاب کے ناظم مولانا زبیراحمد صدیقیؔ نے کہا کہ ناموس رسولؐاور ختم نبوت ہر مسلمان کی آواز ہے،حضور علیہ السلام کی سیرت طبیہ کی برکت سے امن لایا جاسکتا ہے۔ ربیع الاول کے مبارک مہینہ میں حکومت نفاذ اسلام کا اعلان کرے۔ انہوں نے کہا کہ ایک طبقے کی دھرنے کی آڑ میں حکومت پنجاب مسالک میں تفریق کا سلسلہ بندکرے، انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ کی حکومت نے علماء کرام اور دین داروں پر زمین تنگ کردی ،حکومت مساجد، مدارس اور مذہبی طبقات کے خلاف اقدامات کی واپسی کا اعلان کرے۔ اگر امتیازی رویہ بند نہ ہوا تو پھر حکومت کو عوامی مزاحمت کا سامنا کرنا پڑے گا۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ تمام حکومتی کمیٹیوں میں جملہ مسالک کو نمائندگی دی جائے۔کانفرنس سے پیر طریقت مولانا محمد عمر قریشی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جان سے کھیل کر دین کی حفاظت کریں گے۔ کانفرنس سے مولانا محمد عمیر صدیقیؔ اور دیگر نے خطاب کیا ۔جبکہ ملک کے معروف نعت خواں حافظ محمد ابوبکرآف کراچی اور جامعہ فاروقیہ شجاع آباد کے طلباء نے عربی اردو تقاریر اور اپنی خوبصورت نظموں سے محفل میں سماں باندھ دیا۔ کانفرنس میں انجمن تاجران کے عہدیداران حاجی محمد اختر، حاجی محمود الحق، خواجہ محمد ہاشم، خواجہ شکیل الرحمن، خواجہ ضیاء الحق نے بھی خصوصی طور پر شرکت کی۔کانفرنس میں مطالبہ کیا گیا کہ علماء کرام کو فورتھ شیڈول سے نکالا جائے ،لاپتہ کرنے کا سلسلہ روکا جائے، اگر کسی کا جرم ہوتو مقدمہ چلایا جائے، شجاع آباد کو فری زون قرار دیا جائے، سول ہسپتال میں ہیپاٹائٹس کے لیے لیبارٹری اور علاج کا انتظام کیا جائے ۔فیصل آباد کے لیے ٹرین کا سٹاپ مقرر کیا جائے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر