’بس اب بہت ہوگیا‘ تاریخ میں پہلی مرتبہ اردن بھی امریکہ کے خلاف اُٹھ کھڑا ہوا، سنگین ترین دھمکی دے دی، ایسا اعلان کہ ہر مسلمان کا دل جیت لیا

’بس اب بہت ہوگیا‘ تاریخ میں پہلی مرتبہ اردن بھی امریکہ کے خلاف اُٹھ کھڑا ...
’بس اب بہت ہوگیا‘ تاریخ میں پہلی مرتبہ اردن بھی امریکہ کے خلاف اُٹھ کھڑا ہوا، سنگین ترین دھمکی دے دی، ایسا اعلان کہ ہر مسلمان کا دل جیت لیا

  

عمان(نیوز ڈیسک)امریکہ کی جانب سے یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کا اعلان کسی بھی وقت متوقع ہے اور تجزیہ کار خبردار کر رہے ہیں کہ اگر امریکہ کی جانب سے ایسا کوئی اعلان کیا گیا تو مشرق وسطیٰ میں آگ بھڑک اُٹھے گی۔ اگرچہ اکثر مسلم ممالک نے اس معاملے میں خاموشی اختیار کر رکھی ہے لیکن اردن نے ببانگ دہل امریکہ کو خبردار کر دیا ہے کہ ایسا کوئی قدم نہ اٹھایا جائے ورنہ خطرناک نتائج کا امریکہ خود ذمہ دار ہوگا۔

ویب سائٹ ’دی ہل‘ کے مطابق اردن کے وزیر خارجہ ایمن صفدی کا کہنا تھا ”میں نے امریکی وزیر خارجہ ریکس ٹلر سن سے یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت قرار دینے کے خطرناک نتائج پر بات کی ہے۔ا یسا کوئی بھی فیصلہ پوری عرب دنیا میں اشتعال کی لہر دوڑادے گا، کشیدگی بھڑک اُٹھے گی اور امن تباہ ہوجائے گا۔“

امریکہ نے خاموشی سے ایسی خطرناک ترین چیز بھارت پہنچانا شروع کر دی کہ پورا ملک بیمار پڑنے لگ گیا، وہ کام کر دیا جو کسی ملک کی فوج بھی نہ کر سکتی تھی

یاد رہے کہ تاریخی شہر یروشلم میں اسلام، عیسائیت اور یہودیت کے مقدس مقامات واقع ہیں۔ اسرائیل اسے اپنا دارالحکومت قرار دے کر مسلمانوں کو ان کے تاریخی ورثے سے محروم کرنے کی سازش کررہا ہے۔ مسلمانوں کے لئے اس شہر کی اہمیت کے پیش نظر عالمی برادری نے بھی کبھی اسرائیل کے دعوے کو تسلیم نہیں کیا۔ خود امریکہ کے سابق صدور بھی اسرائیل کی جانب سے یروشلم کو اپنا دارالحکومت قرار دینے کی پالیسی کے مخالف رہے ہیں۔ ڈونلڈ ٹرمپ وہ پہلے صدر ہیں جنہوں نے نہ صرف اپنی انتخابی مہم میں وعدہ کیا کہ وہ یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کریں گے بلکہ خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ رواں ہفتے کے دوران کسی بھی وقت وہ باقاعدہ طور پر اس کا اعلان بھی کرسکتے ہیں۔

ڈیلی پاکستان کے یو ٹیوب چینل کو سبسکرائب کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

مزید : بین الاقوامی