ہم سب کویکجا ہوکر ملکی مفاد میں حکومت کا ساتھ دینا ہوگا،ایس ایم منیر

ہم سب کویکجا ہوکر ملکی مفاد میں حکومت کا ساتھ دینا ہوگا،ایس ایم منیر

کراچی (این این آئی)یونائیٹڈ بزنس گروپ(یوبی جی)کے سرپرست اعلیٰ ایس ایم منیر نے کہاکہ اس وقت ملک معاشی طور پر شدید مشکلات سے دوچار ہے اور فیڈریشن چیمبر آف کامرس میں برائے نام اپوزیشن کو ملک اور بزنس کمیونٹی کے بہتر مفاد میں یکجا ہوکر حکومت کا ساتھ دینا ہوگا تاکہ پاکستان کا مستقبل روشن ہوسکے۔انہوں نے ان خیالات کا اظہار لائنز کلب انٹرنیشنل کے ڈائریکٹر،چیئرمین یونائٹیڈ بزنس گروپ پنجاب ریجن،چیئرمین ستارہ گروپ میاں محمدادریس کی جانب سے دیئے گئے عشائیہ میں گفتگو کررہے تھے۔عشائیہ میں نائب صدر کے امیدوارنوراحمدخان ،ایف پی سی سی آئی کے نائب صدر کریم عزیز ملک اوردیگرتاجررہنما بھی موجود تھے۔یو بی جی ترجمان گلزارفیروز کے مطابق معروف تاجر رہنما ایس ایم منیرنے کہا کہ الزام تراشی سب سے آسان کام ہے جو گھر میں بیٹھ کر کیا جاتا ہے جبکہ کارکردگی صرف گھر سے باہرنکل کر اور بزنس کمیونٹی کی خدمت کرنے سے ہی سامنے آتی ہے،فیڈریشن الیکشن میں اپوزیشن گروپ کی مثال "کان بند کرکے راگ الاپنے " جیسی ہے ، اپوزیشن رہنمادر در دھکے کھاتے پھر رہے ہیں لیکن انہیں کہیں سے امیدوار دستیاب نہیں،90فیصد ملک بھر کی بزنس کمیونٹی ہمارے ساتھ ہے اورہم نے بہترین امیدواروں کا گلدستہ پیش کیا ہے اوربزنس کمیونٹی کی طاقت سے یو بی جی تمام نشستوں پر کامیابی حاصل کرے گا ۔انہوں نے کہا کہ میاں محمدادریس نے ایف پی سی سی آئی میں یو بی جی کے پہلے منتخب صدر کے طور پربے مثال کام کئے ۔

اوراسی جذبے سے ہمارے دیگر منتخب صدور عبدالرؤف عالم،زبیرطفیل اورغضنفربلور نے اپنی ٹیم کے ساتھ مل کر بزنس کمیونٹی کے مسائل اجاگر کرنے اور انہیں حل کرانے میں اہم کردار ادا کیا، یو بی جی نے فیڈریشن الیکشن 2019کیلئے پہلے ہی اکثریت ثابت کردی ہے اور28دسمبر کو صرف ہماری جیت کی مہرلگنا باقی ہے، مخالف امیدواروں کا گھر جانا یقینی ہوچکا ہے ،اپوزیشن کواس بارفیڈریشن الیکشن میں ایسی عبرتناک شکست ہوگی کہ آئندہ کئی سال تک ہمارے گروپ کے مقابلے میں آنے کی ہمت نہیں ہوگی۔ یو بی جی پنجاب ریجن کے چیئرمین اور ستارہ گروپ کے چیئرمین اور میزبان میاں محمدادریس نے کہا کہ ہم نے فیڈریشن چیمبر کو ایک انسٹی ٹیوٹ کی مانند چلایا اور جولوگ اس ادارے کو لوٹ کھسوٹ کا مال سمجھ رہے تھے انہیں بزنس کمیونٹی کے ووٹوں کی طاقت سے انکے گھربھیج دیا،ہم نے فیڈریشن میں یہ روایت بھی ڈالی کہ تمام عہدیدار ملک اور بیرون ممالک میں سفر کے اخراجات خو د برداشت کریں اور فیڈریشن کے خزانے پر بوجھ نہ ڈالا جائے اس طرح ہم نے گزشتہ 4سال میں فیڈریشن کی کرڑوں روپے کی بچت کی۔ انہوں نے کہا کہ جب میں نے یو بی جی کی جانب سے فیڈریشن کے پہلے صدر کا منصب سنبھالا تو ایک روپیہ بھی فنڈ میں موجود نہ تھا بلکہ ملازمین کا پرویڈنٹ بھی ہڑپ کرلیا گیا تھا مگر ہم نے قابو پایا اور جب میں نے دوسرے صدر کو چارج دیا تو فیڈریشن کے خزانے میں 4کروڑ روپے موجود تھے جبکہ ہم نے فیڈریشن کی بلڈنگ کے کرایہ داروں کے کرایے بھی بڑھانے کے معاہدے کرکے انکم کا ذریعہ پیدا کیا۔

مزید : کامرس