پولیس مسجد رحمت اللعالمین کے مدرسہ میں تعلیم جاری رکھنے کے انتظامات کرے ، لاہور ہائیکورٹ

پولیس مسجد رحمت اللعالمین کے مدرسہ میں تعلیم جاری رکھنے کے انتظامات کرے ، ...

لاہور(نامہ نگار خصوصی)لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی نے خادم حسین رضوی کے زیر انتظام مسجد رحمت العالمین کی بندش کے خلاف دائردرخواست پر حکم جاری کیا ہے کہ مسجد سے منسلک مدرسے میں بچوں کی تعلیم کا نقصان ہو رہا ہے، پولیس تعلیم جاری رکھنے کے حوالے سے انتظامات کرے۔عدالت نے یہ حکم بھی دیاہے کہ مسجد سے پولیس کو زرا دور کر دیں تاکہ نمازیوں کو مشکل نہ ہو۔ڈی آئی جی آپریشنز نے عدالت کو بتایا کہ مسجد کھول (بقیہ نمبر43صفحہ7پر )

دی گئی ہے تاہم پولیس کوسیکیورٹی پرمامور کیا گیا ہے۔ عدالت نے استفسار کیا کیا رینجرز اور پولیس اہلکارمسجد میں ہیں؟پولیس کی طرف سے بتایا گیا کہ مسجد میں نماز جمعہ کی ادائیگی بھی ہوئی۔درخواست گزار کی طرف سے موقف اختیار کیا گیا کہ 15 سال سے نماز پڑھانے والے حافظ صفدر کو امامت سے روکا جارہا ہے،عدالت کے استفسار پر بتایا گیا کہ حافظ صفدر کے خلاف قابل گرفت ثبوت نہیں ہیں جس پر عدالت نے حکم دیا کہ حافظ صفدر کو نماز پڑھانے دیں، خلاف قانون کچھ کریں تو پولیس کارروائی کرے، اگر پولیس نے لا اینڈ آڈر کو قائم کرنا ہے تو اتھارٹی استعمال کریں، عدالت نے مزید ہدایت کی مسجد میں صرف نماز پڑھائیں اگر خلاف قانون کچھ کریں تو کارروائی کی جائے۔

مسجد مدرسہ

مزید : ملتان صفحہ آخر