کیمروں کی تنصیب میں مبینہ کرپشن ‘ ڈپٹی کمشنر دفتر کا ریکارڈحاصل ‘ چھان بین شروع

کیمروں کی تنصیب میں مبینہ کرپشن ‘ ڈپٹی کمشنر دفتر کا ریکارڈحاصل ‘ چھان بین ...

ملتان ( وقائع نگار ) انٹی کرپشن ملتان ٹیم نے عام انتخابات کے دوران پولنگ اسٹیشنز میں سی سی ٹی وی کیمروں کی تنصیب کے ٹھیکے میں کرپشن کی شکایت پر ڈپٹی کمشنر دفتر کا ریکارڈ حاصل(بقیہ نمبر40صفحہ12پر )

کر لیا ہے۔یاد رہے اس وقت کے ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر فنانس ارشد گوپانگ بھی مذکورہ انکوائری کے سلسلے انٹی کرپشن پیش ہو چکے ہیں۔ انٹی کرپشن حکام نے ڈی سی دفتر سے حاصل کیے گئے ریکارڈ کی جانچ پڑتال شروع کر دی ہے۔جبکہ ڈائریکٹر انٹی کرپشن امجد شعیب ترین نے انکوائری 15 دن میں مکمل کرنے کی بھی ہدایت کی ہے۔واضح رہے اللہ داد خان جوئیہ ایڈووکیٹ نے سی سی ٹی وی کیمروں کے ٹھیکے میں کرپشن پر انٹی کرپشن میں درخواست دی تھی۔کہ ڈپٹی کمشنر مدثر ریاض ملک نے عملے سے ملی بھگت کر کے ایک کروڑ 62 لاکھ کا ٹھیکہ من پسند فرم کو دیا، من پسند ٹھیکیدار کو نوازنے کے لئے ضلعی انتظامیہ نے کرائے کے سی سی ٹی وی کیمروں کے لئے دیا گیا اشتہار بھی واپس لے لیا، ضلعی انتظامیہ نے 25 اور 26 جون کو قومی اخبارات میں سی سی ٹی وی کیمروں کے لئے اشتہارات دیے ,اور پھر 27 جون کو کینسل کر دیے , حالانکہ پیپرا قوانین 2014 کے مطابق 20 لاکھ سے زائد کے منصوبے کی پیپرا ویب سائٹ اور اخبارات میں تشہیر لازمی ہے , ٹھیکہ حاصل کرنے والی کمپنی تین سالہ تجربے کی شرط پر بھی پورا نہیں اترتی تھی، اس کے باوجود ٹھیکہ دیا گیا۔ گھومنے والے کیمروں کی بجائے فکس کیمرے لگائے گئے، ہر پولنگ اسٹیشن پر 8 اور مجموعی طور پر 2072 کیمرے لگائے گئے،جس پر انٹی کرپشن ڈائریکٹر مجد شعیب ترین نے ڈپٹی ڈائریکٹر ٹیکنیکل انٹی کرپشن ملک زاہد اقبال انکوائری افسر مقرر کیا ہے۔

ٹھیکہ

مزید : ملتان صفحہ آخر